مریم نواز گرفتار

مریم نواز گرفتار


لاہور (24نیوز)قومی احتساب بیورونے چوہدری شوگر ملز کیس میں مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نواز اور ان کے چچا زاد بھائی یوسف عباس کو گرفتار کر لیا۔

مریم نواز اپنے والد سابق وزیراعظم نواز شریف سے ملاقات کے لیے کوٹ لکھپت پہنچیں تھیں جہاں سے نیب اہلکاروں نے انہیں حراست میں لیا۔نیب نے اپنے اعلامیے میں مریم نواز اور یوسف عباس کو چوہدری شوگر ملز کیس میں گرفتار کرنے کی تصدیق کی ہے۔

نیب نے کہا ہے کہ چیئرمین نیب کے حکم پر ڈاکٹرز کی ٹیم دونوں کا طبعی معائنہ کرے گی اور کل انہیں احتساب عدالت لاہور میں ریمانڈ کے لیے پیش کیا جائے گا۔یوسف عباس نواز شریف کے بھتیجے ہیں اور انہیں بھی نیب نے مذکورہ کیس میں طلب کر رکھا تھا۔

نیب ذرائع کا کہنا ہےکہ مریم نواز 31 جولائی کے سوالنامے کے تسلی بخش جواب نہیں دے سکی تھیں، جس پر انہیں آج یعنی 8 اگست کو نیب نے طلب کر رکھا تھا۔نیب کی جانب مریم نواز کو دیئے گئے سوالنامے میں سرمایہ کاری اور اراضی سے متعلق مختلف سوالات کیے گئے ہیں۔سوالنامے میں کہا گیا ہے کہ مریم نواز چوہدری شوگر ملز کی تفصیلات فراہم کریں، مل کب لگائی گئی، سرمایہ کاری کہاں سے آئی اور شیئر ہولڈرز کون ہیں۔21 مئی 2008 کی غیر ملکیوں کی سرمایہ کاری کا جواب دیں اور 4 موضع جات میں خریدی گئی اراضی کی تفصیل بھی فراہم کریں۔

چییئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹوزرداری نے رہنما ن لیگ مریم نوازکی گرفتاری کی بھرپورمذمت کی۔بلاول بھٹوکی قیادت میں پیپلزپارٹی نے قومی اسمبلی اجلاس کا بائیکاٹ کردیا۔ ن لیگ نے ایوان میں بھرپوراحتجاج کیا۔

پارلیمنٹ ہاوس کے باہرن لیگ اور تحریک انصاف کے ارکان آمنے سامنے سامنے آگئے۔ پارلیمنٹ ہاؤس کےباہر پی ٹی آئی وزرااورارکان کی پریس کانفرنس کے دوران مسلم لیگ ن کے کارکنوں نے احتجاج کیا اورنعرے بازی کی۔ پی ٹی آئی کے کارکنوں نے بھی جوابی نعرے لگائے۔احسن اقبال ، مریم اورنگزیب سمیت ن لیگ کے اراکین پارلےمنٹ کے باہر احتجاج میں موجود ہیں۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔