محنت کرکے مایوسی کی زندگی سے بچا جاسکتا ہے: چیف جسٹس



24نیوز : چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کا کہنا ہےکہ ہسپتالوں میں صحت کی معیاری اور بنیادی سہولتیں میسر نہیں، محنت کر کے مایوسی کی زندگی سے بچا جا سکتا ہے۔

چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار کا راولپنڈی انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ایک ایک بیڈ پر تین تین مریض پڑے ہیں، ہرکام میرٹ پر کرنے کا فائدہ سالہا سال ہوگا، محنت کرکے مایوسی کی زندگی سے بچا جاسکتا ہے۔

ملک میں بہت کچھ ٹھیک کرنے کی ضرورت ہے، سفارشی کلچر ختم ہونا چاہیئے، تمام کام میرٹ پر ہونے چاہیئں، محنت کر کے مایوسی کی زندگی سے بچا جا سکتا ہے ہسپتالوں میں صحت کی معیاری سہولیات نہیں، ایک ایک بستر پر تین تین مریض ہیں، صحت کے نظام کی بہتری کی ذمہ داری اٹھائی ہے۔

ڈالر کی قیمت میں اضافے کے بعد ادویات کی قیمتوں کا نیا فارمولا طے کرنا ہوگا۔

شازیہ بشیر

Content Writer