متحدہ بانی کے بعد مائنس فاروق ستار کا خدشہ، پارٹی کنوینئر بدلنے کا عندیہ


کراچی (24 نیوز) متحدہ بانی کے بعد فاروق ستار بھی مائنس تو نہیں ہونے والے۔ ایم کیوایم پاکستان میں اختیارات کی لڑائی آخری مرحلے میں داخل ہوگئی۔ فروغ نسیم نے ایم کیو ایم کا کنوینئربدلنے کا عندیہ دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق ایم کیو ایم کی پتنگیں ایک دوسرے سے ہی پیچ لڑانے لگیں۔ بھائی بھائی کہنے والے منہ ماری پراترآئے۔ کراچی کی بڑی جماعت بڑی مشکل سے دو چار ہو گئی۔

سینیٹ کی ٹکٹوں سے شروع ہونے والی لڑائی ذاتیات تک پہنچ گئی۔ میں نہ مانوں کی تکرار میں متحدہ کا متحد رہنا ممکنات سے باہر نظر آنے لگا۔ فاروق ستار اور عامر خان گروپ نے معاملہ انا کا بنا لیا۔

یہ بھی پڑھئے:سینیٹ الیکشن کیلئے،پیپلز پارٹی کی پوزیشن مستحکم

رابطہ کمیٹی کی اکثریت کی مخالفت کے باوجود فاروق ستارنے لچک دکھانے سے انکار کیا تو عامر خان گروپ نے اپنے خفیہ ہتھیار ممتاز ماہر قانون ڈاکٹر فروغ نسیم کو میدان میں اتار دیا جنہوں نے کنوینئر بدلنے کا عندیہ دے دیا۔

پڑھنا نہ بھولئے:نظام الدین سیالوی نے سیاست چھوڑنے کا اعلان کردیا

ایم کیو ایم میں نووارد فروغ نسیم نے اپنی گفتگو کے دوران جہاں نام لے کرسب کا فرداً فرداً شکریہ ادا کیا وہیں فاروق ستار کو بالکل ہی نظر انداز کر گئے۔ یوں اپنے نام کے مصداق فروغ نسیم ایم کیو ایم میں نفرت کی آگ کو ہوا دینے میں لگے ہیں۔

متعلقہ خبر :فیصل سبزواری ’فاروق ستار‘ کے گلے لگ کر رو پڑے

فروغ نسیم کے اس بیان کے بعد ایم کیو ایم پاکستان کے متحد رہنے کی بچی کھچی امیدیں بھی دم توڑ نے لگیں۔ فیصل سبزواری اور وسیم اختر کی مخالفانہ بیان بازی سے صاف لگ رہا ہے کہ اب دونوں دھڑوں کے لیے واپسی ناممکن نہیں تو انتہائی مشکل ضرور ہے۔

عامرخان گروپ کی طرف سے کنوینئر بدلنے کے عندیہ کے بعد ایم کیوایم پاکستان کے متحد رہنے کی ایک ہی صورت باقی رہ گئی ہے کہ فاروق ستار اپنی ضد چھوڑ کر اسی تنخواہ پر کام کرنے پر راضی ہو جائیں اور ایک ڈمی پارٹی سربراہ کے طور پر جب تک چاہیں کام کرتے رہیں۔