تین طلاقیں دینے پر سزا ختم کرنے کا عندیہ

تین طلاقیں دینے پر سزا ختم کرنے کا عندیہ


دہلی( 24نیوز )بھارتی کانگریس نے بیک وقت 3 طلاقیں دینے پر سزا کو ختم کرنے کا عندیہ دے دیا۔

بھارت کی سب سے بڑی اپوزیشن جماعت کانگریس نے کہا ہے کہ اگر ان کی جماعت انتخابات میں کامیاب ہوگئی تو وہ وزیراعظم نریندر مودی کی حکومت کے جاری کردہ اس حکم نامے کو ختم کردے گی جس میں ایک ساتھ 3 طلاق دینے پر مسلمان مردوں کو جیل بھیجنے کا کہا گیا تھا۔

وزیرارعظم نریندر مودی کی ہندو قوم پرست جماعت بھارتی جنتا پارٹی نے جنوری میں ایک خصوصی حکم جاری کرتے ہوئے مسلمان مردوں کے 3 دفعہ لفظ طلاق کہہ کر اپنی اہلیہ کو بیک وقت طلاق دینے کو قابلِ سزا جرم قرار دیا تھا،حکم نامے کی رو سے ایک ساتھ 3 طلاقیں دینے پر 3 سال جیل کی سزا مقرر کی گئی تھی جبکہ مذکورہ بل لوک سبھا یا ایوانِ زیریں میں منظور کرلیا گیا تھا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق جب ایوانِ بالا یعنی راجیہ سبھا میں بیک وقت 3 طلاقوں کو ناقابلِ ضمانت جرم بنانے کا بل پیش کیا گیا تو کانگریس اور کچھ دیگر جماعتوں کی مزاحمت کے باعث یہ منظور نہیں ہوسکا، جس کے بعد حکومت نے اس پر خصوصی حکم نامہ جاری کردیا تھا۔