نیلم جہلم پن بجلی منصوبہ مارچ میں کام شروع کر دے گا، حکام کا دعویٰ

نیلم جہلم پن بجلی منصوبہ مارچ میں کام شروع کر دے گا، حکام کا دعویٰ


جہلم (24 نیوز) ایک دہائی سے زیر تعمیر نیلم جہلم پن بجلی منصوبہ کی تعمیر 97 فی صد مکمل، ڈیم اور سرنگوں میں پانی بھرنے کا عمل شروع، پاور ہاؤس سیوئچ اور ٹرانسمیشن لائنز کی تعمیر تکمیل سے ہمکنار۔

تفصیلات کے مطابق حکومت وقت نے نیلم جہلم پن بجلی منصوبہ کی صورت میں ایک اور سنگ میل عبور کر لیا ہے۔ اسٹیٹ آف دی آرٹ پن بجلی منصوبہ اب بجلی کی پیداوار کے لیے تیار ہے۔ برج نیلم جہلم منصوبہ کا پاور ہاؤس ہے جس میں چار ٹربائینز لگی ہیں۔

چیف ایگزیکٹیو آفیسر بریگیڈیئر(ر) محمد زریں کا کہنا ہے کہ نیلم جہلم ہائیڈرو پراجیکٹ کی تعمیر سے سسٹم میں سالانہ 5 ارب یونٹ سستی بجلی سسٹم میں شامل ہو گی۔ جس سے ملک کو سالانہ 55 ارب روپے کا فائدہ ہو گا۔ اس منصوبہ کی لاگت کا تخمینہ 2008 میں 84ارب روپے لگایا گیا تھا لیکن اب یہ شاہکار بڑی تبدیلیوں کی وجہ سے 500 ارب روپے میں مکمل ہو رہا ہے۔

حکومت کا دعویٰ ہے کہ 969میگا واٹ کے اس منصوبہ سے توانائی کے بحران کے خاتمہ میں مدد ملے گی۔ حکام کا کہنا ہے کہ مارچ میں یہ مشینیں بجلی پیدا کرنا شروع کر دیں گی۔