ٹرمپ کا ایرانی حملوں کےبعد"سب اچھاہے"کا بیان

ٹرمپ کا ایرانی حملوں کےبعد


واشنگٹن(24 نیوز)امریکی صدرڈونلڈٹرمپ نےایرانی حملوں کےبعد"سب اچھاہے"کا بیان دےدیا لیکن ایرانی جنرل پرحملےکولےکرامریکی صدرکوشدیدتنقیدکاسامناہے۔

عراقی شہربغدادمیں دوامریکی فوجی اڈوں پرایرانی میزائل حملوں کےبعد امریکی صدرنے بیان دیا کہ "آل اِز ویل" یعنی سب اچھا ہے۔ صدرٹرمپ نےٹویٹ کیا کہ ایرانی حملوں کےنتیجےمیں ہونیوالےجانی ومالی نقصانات کا تخمینہ لگایا جا رہا ہے۔ ساتھ ہی ساتھ صدرٹرمپ نےیہ بھی کہاکہ امریکاکےپاس دنیاکی سب سےطاقتوراورجدیدفوج ہے۔

ایرانی جنرل پرحملے کولےڈونلڈٹرمپ کوامریکاسےہی شدید تنقید کا سامنا ہے۔امریکی صدارتی امیدواروں کی دوڑمیں شامل ڈیموکریٹ رکن تلسی گیبارڈنےکہا کہ ٹرمپ نےامریکاکی سلامتی کوداؤپرلگادیاہے۔ اس جنگ میں امریکا کےنقصان کےسوا اورکچھ نہیں ہوگا۔ تلسی گیبارڈنےایک انٹرویومیں کہاکہ عراق اورشام سےفوجیں واپس نہ بلائی گئیں توامریکاایسی دلدل میں پھنس جائےگاکہ عراق اور افغانستان کی جنگیں اس کےسامنےپکنک لگنےلگیں گی۔

امریکی ایوان نمائندگان کی اسپیکرنینسی پلوسی نےٹرمپ انتظامیہ کوجارحانہ پالیسی ترک کرنےکی تنبیہ کردی۔ نینسی پلوسی نےکہاکہ امریکااوردنیاایک اورجنگ کے متحمل نہیں ہوسکتے۔ ٹرمپ انتظامیہ ایران کیساتھ غیرضروری اشتعال انگیزی ختم کرے۔

Malik Sultan Awan

Content Writer