سپریم کورٹ نے پانی پورا کرنے کیلئے بڑا حکم دیدیا

سپریم کورٹ نے پانی پورا کرنے کیلئے بڑا حکم دیدیا


اسلام آباد ( 24نیوز ) سپریم کورٹ نے جڑواں شہروں میں پانی کی قلت پر سی ڈی اے اور میونسپل کارپوریشن کو مشترکہ حکمت عملی بنانے کا حکم دے دیا، چیئرمین سی ڈی اے، کنٹونمنٹ بورڈ اور میونسپل کارپوریشن سے ٹیوب ویلز کی تفصیل بھی طلب کرلی۔
چیف جسٹس کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ سماعت کی میں راولپنڈی اسلام آباد میں پانی کی قلت پر ازخود نوٹس کی سماعت کی،زمرد خان، ملک ابرار، شہزادہ خان،سجاول محبوب عدالت میں پیش ہوئے، سابق رکن قومی اسمبلی ملک ابرار اور زمرد خان نے بیان رکارڈ کرایا، عدالت کو بتایا کہ ان کے کوئی ٹیوب ویل نہیں، چیف جسٹس نے ریماکس میں کہا کہ غلط بیانی کی تو توہین عدالت کی کاروائی ہوگی، حلفیہ بیان عدالت میں جمع کرائیں۔
زمرد خان نے عدالت کی توجہ راولپنڈی کنٹونمنٹ بورڈ کے علاقہ میں پانی کے بحران پر دلائی، عدالت کو بتایا کہ کینٹونمنٹ بورڈ اور سی ڈی اے ایک دوسرے سے تعاون نہیں کررہے۔


میونسپل کارپوریشن کے نمائندے نے عدالت سے 15 روز کی ملیت مانگ لی،، عدالت نے چیئرمین سی ڈی اے کو طلب کرتے ہوئے ہدایت کی کہ دونوں ادارے پانی کے معاملے پر مشترکہ حکمت عملی بنائیں، کنٹونمنٹ بورڈ اور ایم ڈی واسا سے دس روز میں غیر قانونی ٹیوب ویلز سے متعلق رپورٹ بھی طلب کرلی۔