پیپلز پارٹی، تحریک انصاف میں جلسہ کا تنازع، کارکنان آمنے سامنے، متعدد زخمی


کراچی (24 نیوز) شہر قائد میں پاکستان پیپلزپارٹی اور پاکستان تحریک انصاف کا 12 مئی کو جلسہ کرنے کا معاملہ تشویشناک صورتحال اختیار کر گیا۔

24 نیوز کے مطابق 12 تاریخ کو پاکستان پیپلز پارٹی اور پاکستان تحریک انصاف نے حکیم سعید گراؤنڈ میں جلسہ کرنے کا اعلان کیا۔ انتظامیہ نے پیپلزپارٹی کو جلسہ کی اجازت دے دی، مگر اجازت نامہ جاری ہونے کے بعد گلشن اقبال کے حکیم سعید گراونڈ میں دونوں جماعتوں کےدرمیان آمنے سامنے آگئے ۔

وفقے وفقے سے تصادم کو رینجرز اور پولیس اہلکاروں نے کنٹرول کیا۔ابتدائی طور پر کہا گیا کہ پولیس موقع سے غائب ہو گئی جس کی وجہ سے معاملہ تشویشناک صورتحال اختیار کر گیا۔ یہ بھی کہا گیا کہ اگر پولیس موقع پر موجود رہتی تو ایسی صورتحال پیدا نہ ہوتی۔ جبکہ بعد ازاں جب معاملہ بڑھا تو واٹر کینن بھی منگوائے گئے جن کو استعمال میں نہیں لایا گیا۔ 

یہ بھی پڑھیں: ایک گراؤنڈ، دو پارٹیاں،کراچی میں بڑا ہنگامہ ہونے کا خدشہ 

کارکنان نے کیمپوں میں آگ لگا دی۔ گتھم گتھا بھی ہوئے اور بعد ازاں ایک دوسرے پر پتھراؤ بھی کیا گیا۔ اس دوران ہوائی فائرنگ بھی دیکھنے میں آئی۔ دونوں جماعتوں کے کارکنان زخمی بھی ہوئے ہیں۔ اگر بڑی سطح پر اس کو روکا گیا تو نقصان جانی بھی ہو سکتا ہے۔ 

پی ٹی آئی نے الزام عائد کیا ہے کہ پی پی پی کی اپنی حکومت ہے جس کی بنا پر اجازت حاصل کر لی گئی۔ جبکہ پی ٹی آئی کی جانب سے کیمپ پہلے لگائے گئے۔