آئی ایم ایف کا دباؤ، حکومت کا سٹیل ملز کی نجکاری کا فیصلہ

آئی ایم ایف کا دباؤ، حکومت کا سٹیل ملز کی نجکاری کا فیصلہ


اسلام آباد(24 نیوز) حکومت نےآئی ایم ایف کےدباؤپراسٹیل ملزکی نجکاری کافیصلہ کرلیا، ٹیکنوکریٹ مشیرکافیصلہ منتخب سیاسی نمائندےسےزیادہ طاقتورثابت ہوا۔

 حکومت نے ناں ناں کرکے ہاں کرہی دی اوراب اسٹیل ملزکی بحالی کی بجائے نجکاری ہوگی۔ یہ فیصلہ بھی کسی سیاسی وزیرنے نہیں بلکہ ٹیکنوکریٹ مشیرنے کیا۔ سابق وزیرخزانہ اسد عمر نے اسٹیل ملز کی نجکاری کے بجائے اس کی بحالی کا پلان بنایاتھا۔ مشیرخزانہ حفیظ شیخ نےسمری کابینہ کی نجکاری کمیٹی میں پیش کرنےکی ہدایت کردی۔ نجکاری کمیشن کوای سی سی کےفیصلےپرعملدرآمد کی ہدایت بھی کردی گئی۔

سندھ حکومت نےاسٹیل ملزکی نجکاری کےفیصلےکوغیرقانونی قراردےدیا۔ مشیر اطلاعات سندھ مرتضیٰ وہاب نے کہااسٹیل ملزکی زمین سندھ حکومت کی پراپرٹی ہے۔ اعتمادمیں لیےبغیرنجکاری کا فیصلہ کیسےکرلیاگیا؟

نجکاری کے فیصلے پر پی ٹی آئی کے اندر سے بھی آوازیں اٹھنے لگیں۔  فردوس شمیم نقوی نے کہا اسٹیل ملز کی نجکاری سے محنت کشوں کا نقصان ہوگا۔

اسٹیل ملز کی نجکاری کے فیصلے پرہزاروں ملازمین بے چینی کاشکارہوگئے ہیں۔

Malik Sultan Awan

Content Writer