عطا الحق قاسمی  کی ایم ڈی پی ٹی وی تقرری غیر قانونی قرار

عطا الحق قاسمی  کی ایم ڈی پی ٹی وی تقرری غیر قانونی قرار


اسلام آباد(24نیوز) سپریم کورٹ نے عطا الحق قاسمی کےبطور ایم ڈی اورڈائریکٹر پی ٹی وی تقررکوغیرقانونی قراردے دیا۔

 تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے سابق ایم ڈی پی ٹی وی عطاء الحق قاسمی از خود نوٹس کیس کا فیصلہ سنادیا،جسٹس عمر عطا بندیال نے چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کاتحریری کردہ تحریری فیصلہ سناتے ہوئے عطا الحق قاسمی کے بطور ایم ڈی اور ڈائریکٹر پی ٹی وی تقرر کوغیرقانونی قرار دےدیا، 48 صفحات پرمشتمل تحریری فیصلے میں عدالت نےحکم دیا کہ عطا الحق قاسمی نے بطور ایم ڈی جو احکامات دیئے وہ غیرقانونی ہیں،عطا الحق قاسمی نے جتنی تنخواہ اور مالی فوائد لیے وہ بھی غیر قانونی ہیں.

عدالت نے حکم دیا کہ عطا الحق قاسمی نے 19 کروڑ 78 لاکھ روپے وصول کیےیہ واپس لیے جائیں،آدھے پیسے عطا الحق قاسمی سے اور باقی آدھے پرویزرشید،اسحاق ڈار اورفوادحسن فواد سےلیے جائیں، عدالت کا کہنا تھا کہ ایم ڈی پی ٹی وی کے عہدے پرمستقل تعیناتی کی جائے،سابق وفاقی وزیراطلاعات پرویز رشید نے ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ فیصلے پروکلاء سے مشاورت کے بعد لائحہ عمل طے کروں گا۔

ضرور پڑھیں:انکشاف 16 جون 2019

واضح رہے کہ چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار پر مشتمل تین رکنی بینچ نے عطا الحق قاسمی کی بطور ایم ڈی پی ٹی وی تقرری سے متعلق کیس کا فیصلہ 12 جولائی 2018 کو محفوظ کیا تھا۔