استعفیٰ شرط ہے تو مذاکرات نہ کیے جائیں:عمران خان

استعفیٰ شرط ہے تو مذاکرات نہ کیے جائیں:عمران خان


اسلام آباد(اویس کیانی )سپیکر پنجاب اسمبلی  چودھری پرویز الہیٰ نے  وزیراعظم عمران خان سے ملاقات  کی ہے،چودھری  پرویز الہیٰ نے  وزیراعظم کو مولانا فضل الرحمان سے ملاقاتوں پر اعتماد میں لیا۔

آزادی مارچ دھرنے کے سیاسی حل کی مختلف تجاویز پر بات چیت کی گئی، پرویز الہیٰ عام انتخابات 2018 کی تحقیقات پر مولانا فضل الرحمان  کے جواب سےوزیر اعظم کو آگاہ کرینگے، حکومت نے مولانا فضل الرحمن کو جوڈیشل کمیشن یا پارلیمانی کمیٹی کے ذریعے عام انتخابات کی تحقیقات کی پیشکش کی تھی۔

ذرائع کے مطابق چوہدری پرویز الٰہی نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی جس میں انہوں نے مولانا فضل الرحمان سے ہونے والی 5 ملاقاتوں کی تفصیلات وزیراعظم کو بتائیں۔

دوسری جانب وزیراعظم عمران خان سے حکومتی مذاکراتی کمیٹی کی ملاقات جاری ہے جس میں رہبر کمیٹی سے ہونے والی ملاقاتوں پر وزیراعظم کو بریفنگ دی جا رہی ہے۔ذرائع کا بتانا ہے کہ حکومتی کمیٹی کی رہبر کمیٹی کی شرائط پر وزیراعظم سے مشاورت کی جا رہی ہے،  وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے بار بار استعفےکی بات ہو رہی ہے، اگر استعفیٰ ہی شرط ہے تو مذاکرات نہیں ہونے چاہئیں۔مولانا ٹائم پاس کررہے ہیں تو ہم بھی ٹائم پاس کررہے ہیں۔

وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کے بعد چودھری  پرویز الہیٰ کی  مولانا فضل الرحمان  سے ملاقات متوقع ہے ۔

جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی قیادت میں اپوزیشن جماعتوں کے آزادی مارچ کا آج نواں روز ہے اور دھرنے کے شرکاء سرد موسم کے باوجود ایچ نائن گراؤنڈ میں موجود ہیں۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer