سینیٹ اجلاس، فواد چودھری کو مائیک ملنے پر اپوزیشن کا واک آؤٹ

سینیٹ اجلاس، فواد چودھری کو مائیک ملنے پر اپوزیشن کا واک آؤٹ


اسلام آباد(24نیوز) سینیٹ اجلاس حکومت اور اپوزیشن کی ہنگامہ آرائی کی نظر ہو گیا، وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے کہا احتساب کی بات کی جائے تو انکا سانس خشک ہو جاتا ہے، فواد چوہدری کو مائیک ملنے پر اپوزیشن نے احتجاجاً واک آؤٹ بھی کیا.

چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کی زیرصدارت سینیٹ اجلاس میں مسلم لیگ ن کے ارکان شہبازشریف کی گرفتاری پر احتجاجا بازوؤں پر سیاہ پٹیاں باندھ کر شریک ہوئے ۔ اپوزیشن لیڈر راجہ ظفرالحق نے نیب کے ہاتھوں شہبازشریف کی گرفتاری کا معاملہ اٹھاتے ہوئے کہا کہ یہ جمہوریت کے لیے سیاہ دن تھا , شہباز شریف کو بلایا کسی اور کیس میں لیکن گرفتار کسی اور کیس میں کیا۔

سینیٹر جاوید عباسی نے کہا کہ آشیانہ ہاؤسنگ سکیم میں شہباز شریف کے خلاف کرپشن کا کوئی الزام نہیں، نہ انکوائری ہوئی نا تحقیقات اور نا ہی کوئی ریفرنس فائل ہوا ہے لیکن شہباز شریف کو گرفتار کرلیا گیا ہے, بتایا جائے کہ نیب کس کے ماتحت کام کررہا ہے.

وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ شہبازشریف کو نیب نے گرفتار کیا ہے, اپوزیشن کو احتساب پر کیوں اعتراض ہے۔ اپوزیشن شہبازشریف کی گرفتاری کو سیاسی رنگ دے رہی ہے ۔

وزیراطلاعات چوہدری فواد چوہدری کو تقریر کا موقع دینے پر اپوزیشن ارکان نے احتجاج کیا اور ایوان سے واک آوٹ کر گئے ۔وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا نیب قانون بنانے والے ہمیں بتائیں گے کہ انتقامی کارروائی کیا ہوتی۔ وزیر اعظم نے کہا تھا چوروں اور ڈاکوں کو پکڑیں گے یہ اپوزیشن والے کیوں ڈر جاتے ہیں۔ نیب جانے اور ان کی کارروائی جانے۔ اپوزیشن نے وزیراطلاعات کی تقریر کے دوران کورم کی نشاندہی کردی۔ چیئرمین سینٹ نے کورم پورا نہ ہونے پر سینٹ کا اجلاس بدھ کی سہہ پہر تین بجے تک ملتوی کردیا۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔