صدر ممنون حسین کی مدت صدارت کا آج آخری روز



اسلام آباد(24نیوز) صدر ممنون حسین کے عہدے کی آج مدت پوری ہوگئی،  صدرکو آج الوادعی گارڈ آف آنرپیش کیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق صدر ممنون حسین آج صدر ارتی ذمہ داریوں سے مکمل طور پر سبکدوش ہوجائیں گے،  ملک کے نئے منتخب صدر   عارف علوی کل اپنے عہدے کا حلف اٹھائیں گے. واضح رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے ڈاکٹر عارف علوی کو چاروں صوبائی اسمبلیوں، قومی اسمبلی اور سینیٹ  کے اراکین نے خفیہ ووٹنگ کے ذریعے 4 ستمبر کو منتخب کیا تھا۔

صدر ممنون حسین کون ہیں؟ 

صدر پاکستان ممنون حسین  کی تعلیم ایم  بی اے ہے ۔ تعلیم مکمل کرنے کے بعد ممنون حسین نے اپنے والد کے ساتھ  کاروبار سنبھالا۔ انھوں نے ایک کارکن ہونے کی حیثیت سے اپنی سیاست کا آغاز کیا، 1993 میں جب نواز شریف کی حکومت کو  برطرف کیا گیا تو ممنون حسین شریف برادران کے قریب ہوئے اور اس دوران  وہ مسلم لیگ سندھ کے قائم مقام صدر سمیت دیگر عہدوں پر فائز رہے۔1997 میں  ممنون حسین وزیر اعلیٰ سندھ لیاقت جتوئی کے مشیر اور 1999 میں انھیں گورنر بنا دیا گیا۔

2013 میں ایک بار پھر جب مسلم لیگ (ن) کی حکومت بنی تو ان کو صدارت کا عہدہ دے دیا گیا۔انھوں نے 2013 میں صدارتی الیکشن میں پی ٹی آئی کے امیدوار وجیہ الدین کو 77 ووٹ سے شکست دے کر 9 ستمبر 2013 کو صدر کی نشت سنبھالی۔ صدر ممنون حسین نے اپنے پانچ سالہ دورے میں متعدد قوانین اور آرڈیننس پر دستخط کیے، انھوں نے اردو زبان کے فروغ اور معاشرے کے نچلی طقبے کے فلاح کے متعدد منصوبوں کی افتتاح بھی کی۔بحیثیت صدر ممنون حسین نے نائجیریا، آذربائیجان،چین اور تاجکستان کا دورہ کیا، صدر نے 4 بار پارلیمنٹ سے خطاب کیا۔

صدر ممنون حسین نے دور صدارت میں کئی اچھے کارنامے سرانجام دئیے، اور آج وہ اپنی مدت پوری کرنے کے بعد صدارت کے عہدے سے سبکدوش ہوجائیں گے۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔