لیگی حکومت کی ناکامی، شرحِ نمو کے اعدادوشمار سامنے آ گئے


 اسلام آباد(24نیوز) مسلم لیگ ن کی حکومت چھ فیصد معاشی شرح نمو کا ہدف حاصل کرنے میں ناکام ہوگئی۔ رواں سال اقتصادی ترقی کی شرح پانچ اعشاریہ سات نو فیصد رہی۔ پاکستانیوں کی سالانہ آمدن 1800 ڈالرز سے بڑھ گئی۔

تفصیلات کے مطابق ادارہ شماریات کے مطابق حکومت اقتصادی ترقی کا چھ فیصد ہدف حاصل کرنے میں کامیاب نہیں ہوسکی۔ رواں مالی سال کے دوران ملکی اقتصادی ترقی کی شرح 5.79 فیصد رہی جس میں زرعی شعبہ نے بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔

زرعی شعبہ کی پیداوار 3.5 فیصد کے مقررہ ہدف کے مقابلے میں 3.81 فیصد رہی جس میں چاول کی فصل میں 8.7 فیصد، چینی 7.4 فیصد اور کپاس کی پیداوار میں 11.8 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں:رواں ہفتے پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں تیزی، روپے کی قیمت میں استحکام رہا

 صنعتی سیکٹر اپنا پیداواری ہدف حاصل کرنے میں کامیاب نہیں ہوسکا۔ صنعتی سیکٹر کی پیداورا 7.3 فیصد کے مقررہ ہدف کے مقابلے میں 5.80 فیصد رہی جس میں مینوفیکچرنگ سیکٹر کی پیداوار 6.24 فیصد رہی۔ بڑی صنعتوں کی پیداور 6.13 اور چھوٹی صنعتوں کی پیداوار 8.18 فیصد رہی۔

سروسز سیکٹر کی پیدوار 6.4 فیصد کےمقررہ ہدف کے مقابلے میں 6.43 فیصد رہی۔ ہول سیل اینڈ ریٹیل سیکٹر 7.51 فیصد، ہاؤسنگ سیکٹر چار فیصد اورحکومتی خدمات کے شعبے میں 11 فیصد سے زیادہ اضافہ ہوا۔ادارہ شماریات کے مطابق پاکسانیوں کی فی کس آمدن 1600 ڈالرز سے بڑھ 1800 ڈالرز تک پہنچ چکی ہے۔

مزید اس ویڈیو میں: