اب خواجہ سرا بچے بھی پڑھیں گے،حکم آگیا

اب خواجہ سرا بچے بھی پڑھیں گے،حکم آگیا


لاہور( 24نیوز ) تعلیم سب کیلئےحکومت پنجاب نے احسن قدم اٹھا لیا،اب سرکاری سکولوں میں خواجہ سرا بچوں کوتعلیم کامساوی حق ملے گا،عزت ملے گی اور احترام بھی،خواجہ سراءبچوں کے گرلزاوربوائز سکولوں میں داخلے کے احکامات سے متعلق سرکار نے نوٹیفکیشن جاری کردیا۔
خواجہ سراﺅں کو معاشرے کا عضو معطل سمجھا جاتا ہے، ہر بارہر جگہ نظر انداز کئے جانے والے یہ خواجہ سرا ،جن سے سب دل محظوظ ضرورکرتے ہیں مگر جائز مقام کو ئی نہیں دیتے، جنھیں ہم سب نے جیتے جاگتے انسانوں کی جگہ کھلونا سمجھ لیا، خوشیاں چھین لیں اور فقط اپنی خوشیوں پر ناچنے والابنادیا۔

  یہ بھی پڑھیں:  خیبر پختونخوا:عمران خان نے ارب پتی وزیر اعلیٰ نامزد کردیا

 محکمہ تعلیم کی جانب سے جاری کئے گئے نوٹیفکیشن کے مطابق خواجہ سرا بچوں کو سرکاری درسگاہوں میں بلاتخصیص داخلے دیئے جائینگے۔ دھتکارانہیں جائیگا، عزت واحترام سے پیش آیا جائیگا، سرکاری حکم نامے میں خواجہ سرا بچوں کو ان کی قریب ترین شناخت کے مطابق گرلز یا بوائز سکولوں میں داخلہ دیاجائیگا۔
جائیداد میں حصہ ،شناختی کارڈ کا اجرا، ووٹ کا حق، باعزت زندگی کیلئے نوکریوں کی فراہمی کے مواقع کے بعد مساوی تعلیم کا حق معاشرے کے بے توقیر خواجہ سراوں کو معاشرے میں باعزت مقام دے سکتا ہے۔ شاید حقیقی تبدیلی کا یہی نکتہ آغازہو۔