کپتان نے معافی مانگ لی

کپتان نے معافی مانگ لی


اسلام آباد(24نیوز) انتخابی مہم کے دوران نازیبا الفاظ کے استعمال،چیرمین تحریک انصاف عمران خان،اسپیکر سردار یازصادق ،فضل الرحمان اور پرویزخٹک انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف وزریوں پر معافی نامے منظور کرلیے، ووٹ کی رزادری پامال کرنے پر عمران خان کا تحریری جواب مسترد کل تک عمران خان کے دستخط کے ساتھ حلف نامہ جمع کرانے کا حکم دے دیا.

 تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن میں چیرمین تحریک انصاف عمران خان،اسپیکر سردار یاز صادق ،فضل الرحمان اور پرویزخٹک انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف وزریوں کی سماعت ہوئی۔  چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں الیکشن کمیشن نے ضابطہ اخلاق مقدمے کی سماعت کے دوران اسپیکر سردار ایاز صادق کے بیان کی ویڈیو چلائی گئی۔ ایاز صادق کے وکیل کا کہنا تھا کہ بیان پر تحریری معافی نامہ جمع کراچکے ہیں جبکہ چیف الیکشن کمشنر  کا کہنا تھا کہ ایاز صادق اس دن ہمیں اوقات دکھا رہے تھے آج ایاز صادق دیکھ لیں ان کی کیا اوقات ہے۔عدالت نے تحریری معافی نامہ قبول کرتے ہوئے مقدمہ ختم کردیا۔

یہ بھی لازمی پڑھیں۔۔۔نواز شریف اور واجد ضیا پیر کو عدالت میں طلب 

 علاوہ ازیں مولانا فضل الرحمان اور پرویز خٹک کے وکلا نے بھی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر تحریری جواب جمع کردایا۔چیرمین تحریک انصاف عمران خان نےبھی وکیل بابراعوان کےذریعے انتخابی مہم کے دوران "گدھا" کہنے سے متعلق بیان پر تحریری معافی مانگ لی۔ الیکشن کمیشن نے پرویز خٹک اور ایاز صادق کے معافی نامے قبول کرتے ہوئے پرویز خٹک کا این اے 25 نوشہرہ،پی کے 61 اور 64 جبکہ ایاز صادق کا این اے 129 سے بھی کامیابی کا نوٹیفکیشن جاری کرنے کا بھی حکم دے دیا۔

یہ خبر بھی پڑھیں۔۔۔سندھ اسمبلی میں مخصوص نشستوں کی تقسیم،پیپلز پارٹی کی اہم شخصیات محروم 

 واضح رہے کہ الیکشن کمیشن نے تمام رہنماوں کو آئندہ نازیباز زبان استعمال نہ کرنے کی تنبیہ کرتےہوئے کہاکہ آئندہ ایسی زبان کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ الیکشن کمیشن نے عمران خان کی جانب سے ووٹ کی رازداری پامال کرنے سے متعلق تحریری جواب مسترد کرتے ہوئے کل تک عمران خان کے دستخط کے ساتھ حلف نامہ جمع کرانے کا حکم دے دیا ہے۔

یہ بھی لازمی دیکھیں۔۔۔