نیب اور پنجاب حکومت آمنے سامنے آگئے



لاہور (24 نیوز) نیب اور پنجاب حکومت آمنے سامنے آگئے، چیئرمین نیب نے پنجاب حکومت پر تعاون نہ کرنے کا الزام لگایا تو ترجمان پنجاب حکومت ملک احمد خان نے جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کے بیان کو حقیقت کے منافی قرار دے دیا۔

نیب اور پنجاب حکومت آمنے سامنے آگئے، گذشتہ روز چیئرمین نیب نے جس انداز سے اظہار خیال کیا اس سے معاملے کی سنگینی کا خوب اندازہ ہوتا ہے۔ چیئرمین نیب کے اس بیان پر پنجاب حکومت نے خوب سوچ بچار کیا اور چوبیس گھنٹے بعد ردعمل دیا۔ ملک احمد خان نے کہا کہ چیئرمین نیب کا بیان حقیقیت پر مبنی نہیں، پنجاب کے ادارے نیب سے مکمل تعاون کررہے ہیں۔ چیئرمین نیب کو جس محکمہ سے شکایت ہے اس کے بارے میں تحریری طور پر لکھ کر دیں۔

ترجمان پنجاب حکومت کا مزید کہنا تھا کہ چیئرمین نیب کو پنجاب جیسی شفاف حکومت کے بارے میں ایسا بیان نہیں دینا چاہیے تھا۔

ضرور پڑھیں:انکشاف15 جون 2016

دوسری طرف ترجمان نیب کا بھی اس پر ردعمل آگیا، جن کا کہنا تھا کہ ریکارڈ فراہم کرنے کیلئے حکومت پنجاب کو چار خطوط لکھے ہیں۔ چیئرمین نیب نے ریکارڈ فراہم نہ کرنے پر آٹھ فروری کو نوٹس لیا، تاہم پنجاب حکومت تعاون نہیں کررہی۔ ترجمان نیب نے کہا کہ چیئرمین نیب نے پنجاب حکومت اور بیوروکریسی کو ریکارڈ کی فراہمی کے لیے کہا۔