کراچی پانی کی شدید ترین قلت سے دوچار

کراچی پانی کی شدید ترین قلت سے دوچار


کراچی ( 24نیوز ) پاکستان کا گنجان آباد شہرکراچی آج بھی پانی کی شدید ترین قلت سے دوچار ہے۔ پانی کی ضروریات تو بڑھ رہی ہیں لیکن سپلائی بڑھانے کے منصوبے التوا کاشکار ہیں ۔ منتخب نمائندے بدل گئے مگر شہر کی قسمت نہیں بدلی۔ 

ٹھاٹھیں مارتاسمندر اور اونچی اونچی لہروں کے کنارے آباد شہر کراچی  جہاں کے منتخب نمائندے تو بدل گئے مگر شہر کی قسمت نہیں. شہر کل بھی پیاسا تھا،  آج بھی پیاس سے تڑپ رہا ہے۔  شہر کی آبادی تو ہر سال بڑھ رہی ہے مگر پانی کی فراہمی نہیں۔ گزشتہ 13 سال سے پانی کی فراہمی میں کوئی اضافہ نہیں کیا گیا۔

کراچی میں یومیہ بارہ سو ملین گیلن پانی کی طلب ہے اور رسد صرف بمشکل پانچ سو ملین گیلن ہے۔ یومیہ 80 ایم جی ڈی حب ڈیم اور باقی کا 420 ایم جی ڈی پانی پیپری سے فراہم کیا جاتا ہے۔  دوسری جانب اضافی پانی کی فراہمی کا منصوبہ "کے فور" کئی سال سے تاخیر کا شکار ہے۔

قیامت خیز گرمی اور اس پر پانی کی قلت سے کراچی کے شہری شدید پریشانی میں مبتلا ہے ۔  سب سے زیادہ متاثرہ علاقوں میں بلدیہ ٹاون، اورنگی ٹاون، کیماڑی، حسین آباد اور دیگر علاقے شامل ہیں ۔  واٹر بورڈ حکام کے مطابق شہر بھر میں صرف چھ قانونی ہائڈرینڈز موجود ہیں جن کو یومیہ اٹھارہ ایم جی ڈی پانی دیا جاتا ہے۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔