تحریک انصاف کے اہم رہنماؤں کو ٹکٹ کیوں نہ مل سکا؟

12:16 PM, 9 Jun, 2018

وقار نیازی
Read more!

اسلام آباد(24نیوز) تحریک انصاف نے الیکشن دو ہزار اٹھارہ کیلئے امیدواروں کے ناموں کو اعلان کر دیا، ٹکٹ نہ ملنے پر کئی کارکن ناراض ہوگئے، کہتے ہیں پرانے اور نظریاتی کارکنوں کو نظر انداز کرکے دوسری پارٹیوں سے شامل ہونے والوں کو نوازا گیا ہے۔ 
الیکشن 2018 کی گہما گہمی میں تیزی آگئی، تحریک انصاف نےقومی اسمبلی کے 173 اور صوبائی اسمبلی کیلئے 290 امیدواروں فہرست جاری کر دی،عمران خان خود پانچ حلقوں سے الیکشن لڑیں گے، پارٹی میں نووارد رہنماؤں کے تو ہوگئے وارےنیارے، پرانےکھلاڑیوں کو کیا گیا نظرانداز۔امیدواروں کی فہرست سامنے آتے ہی نظر انداز کئے جانے والے رہنما اور کارکن پارٹی قیادت سے شدید ناراض ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  لاہور کی سیاست میں کس کا مقابلہ کس سے ہوگا؟ 

جن رہنماؤں کو ٹکٹ جاری نہیں ہوئے ان میں شہر یار آفریدی، خورشید قصوری، رشید گوڈیل، علی محمد جان، صفدر وڑائچ اور شوکت یوسفزئی شامل ہیں۔ ٹکٹ نہ ملنے پر کئی ناراض کارکنوں نے بنی گالہ کے باہر دھرنے اور بھوک ہڑتال کی دھمکی تک دے ڈالی، ان کامزید کہنا ہے کہ  نظریاتی کارکنوں کو نظر انداز کرنا زیادتی ہے، قیادت دوسری پارٹیوں سے شامل ہونے والوں کو نواز رہی ہے۔

مزیدخبریں