چیئرمین سینیٹ کیلئے ن لیگ نے نیا امیدوار ڈھونڈلیا


اسلام آباد(24نیوز)تین مارچ کو سینیٹ کے انتخابات کے بعد ملکی سیاست دلچسپ صورتحال اختیار کرگئی ہے،تمام بڑی سیاسی جماعتوں کی کوشش ہے کہ چیئرمین سینٹ ان کا ہی ہو،مسلم لیگ ن نے تو پیپلز پارٹی کو رضا ربانی کو ایوان بالا کا دولہا بنانے کی صورت میں حمایت کی بھی پیشکش کی جس کو سابق صدر آصف زرداری نے مسترد کردیا اور سلیم مانڈوی والا کو وہ اپنا امیدوار بنانا چاہتے ہیں ۔

دوسری طرف تحریک انصاف نے اپنے سینیٹرز بلوچستان کے سینیٹرز کی جھولی میں ڈال کر پیپلز پارٹی کی خاموش حمایت کردی ہے،عمران خان کے اس فیصلے سے بظاہر پیپلز پارٹی کی پوزیشن مضبوط ہوگئی ہے۔

سینیٹ میں 33 نشستوں کے ساتھ سب سے بڑی جماعت مسلم لیگ (ن) نے اپنا چیئرمین سینیٹ لانے کے لئے رابطے مزید تیز کردیے جس کے لئے سینیٹر مشاہد اللہ کراچی پہنچ گئے جہاں وہ متحدہ قومی موومنٹ پاکستان اور مسلم لیگ فنکشنل سے رابطہ کریں گے،چیئرمین سینیٹ کے لئے رضا ربانی کی بطور متفقہ امیدوار نام سامنے نہ آنے کی صورت میں مسلم لیگ (ن) نے اس عہدے کے لئے اپنے نئے نام پر غور شروع کردیا۔

یہ بھی پڑھئے: سیاسی باراتیوں کو ایوان بالا کا دولھا مل گیا؟

جبکہ جمعیت علما اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے تجویز دی ہے کہ رضا ربانی کو چیئرمین سینیٹ بنانے کے لئے پیپلز پارٹی سے دورباہ رابطہ کیا جائے،ادھر فاٹا اور بلوچستان کے آزاد گروپ نے سیاسی جماعتوں سے ڈپٹی چیئرمین کا عہدہ مانگ لیا،گزشتہ روز چیئرمین تحریک انصاف عمران خان اور وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو کے درمیان ہونے والی ملاقات کے دوران سینیٹ میں ا?ئندہ کی حکمت عملی پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

بعدازاں مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران عمران خان کا کہنا تھا کہ سینیٹ چیئرمین شپ پر پیپلز پارٹی کے ساتھ جانا مشکل ہے تاہم تحریک انصاف کے 13 سینیٹرز بلوچستان سے منتخب 8 آزاد سینیٹرز کا ساتھ دیں گے اور یہ 21 سینیٹرز پیپلز پارٹی کے ساتھ کسی بھی طرح کی بات چیت کے لیے آزاد ہیں۔

متعلقہ خبر: چیئرمین سینیٹ کس صوبہ سے ہونا چاہیے، عمران خان نے دو ٹوک فیصلہ سنا دیا

مسلم لیگ ن کی طرف چیئرمین سینیٹ کیلئے پرویز رشید کا نام لیا جارہا تھا جو ن لیگ کے سیاسی مخالفین کیلئے ناقابل قبول تھے،اتحادیوں کو بھی ان پر تحفظات تھے اور اسٹیبلشمنٹ کیلئے بھی درد سر۔اب ن لیگ نے سب کے منظور نظر راجہ ظفر الحق کو چیئرمین سینیٹ کا امیدوار لانے کیلئے غور شروع کردیا ہے۔
یاد رہے چیئرمین سینٹ کا انتخاب 12مارچ کو پارلیمنٹ ہاؤس میں ہوگا۔

اظہر تھراج

صحافی اور کالم نگار ہیں،مختلف اخبارات ،ٹی وی چینلز میں کام کا وسیع تجربہ رکھتے ہیں