امریکہ نے ایران نیوکلیئر ڈیل سے الگ ہونے کا اعلان کر دیا


واشنگٹن (24 نیوز) امریکہ پر ایران مخالف قوتوں کا اثر و رسوخ کام کر گیا۔ امریکی صدر نے ایران سے جوہری معاہدہ ختم کرنے کا اعلان کردیا۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے ایران کے خلاف سخت پابندیاں عائد کرنے کی دھمکی بھی دے ڈالی۔ دوسری ایرانی صدر حسن روحانی نے ردعمل میں کہا کہ جھوٹا امریکہ کبھی معاہدہ سے مخلص ہی نہیں تھا۔

 "Therefore, I am announcing today that the United States will withdraw from the Iran nuclear deal." pic.twitter.com/hvnlrkJAQD

24 نیوز کے مطابق وہی ہوا جس کا ڈر تھا۔ امریکہ شمالی کوریا سے نظریں ہٹا کر ایران پر چڑھ دوڑا۔ امریکی صدر نے ایران پر معاشی پابندیوں کے علاوہ ایران سے ایٹمی تعاون کرنے والے ملک کے خلاف بھی سخت پابندیوں لگانے کی دھمکی دے ڈالی۔

امریکی ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ ڈیل کے تحت ایران کو یورنییم افزودہ کرنے کی اجازت مل گئی تھی۔ ایران نیوکلیئر ڈیل یک طرفہ تھی، معاہدہ نہیں ہونا چاہیے تھا۔

پڑھنا نہ بھولیں: یمن میں جنگ کے باعث بھوک اور موت کا رقص 

ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ایران ، شام اور یمن میں کارروائیوں میں ملوث ہے۔ معاہدہ کو جاری رکھا تو ہتھیاروں کی دوڑ شروع ہو جائے گی۔ امریکی صدر نے کہا کہ ایران کے نیو کلیئر خطرہ سے نمٹنے کے لیے اتحادیوں سے مل کر کام کریں گے۔

ایرانی صدر حسن روحانی نے امریکی فیصلہ کے ردعمل میں کہا کہ امریکی صدر کا اعلان ایٹمی معاہدوں کی خلاف ورزی ہے۔ ایران نے ہمیشہ ایٹمی معاہدہ پر عمل کیا ہے۔ امریکہ کبھی جوہری معاہدہ سے مخلص ہی نہیں تھا۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ شروع دن سے جھوٹ بولتے ہوئے بغیر کسی ثبوت کے ایران پر الزامات لگاتا آیا ہے۔