نیب نے وزارت داخلہ سے نوازشریف کی واپسی کی گارنٹی مانگ لی



لاہور(24 نیوز) سابق وزیراعظم نوازشریف کا لندن روانگی کیلئے ٹکٹ کنفرم ہوگیا لیکن نام ای سی ایل سے نہ نکالا جاسکا، معاملہ نیب اور وزارت داخلہ میں کھیل بن کر رہ گیا،رپورٹ طلب کرنےپرمیڈیکل بورڈ نے واضح کردیا کہ نوازشریف کی طبیعت انتہائی تشویشناک ہے۔

تین بارکے وزیراعظم میاں نوازشریف کی صحت کو شدید خطرات لاحق، لیکن ای سی ایل سے نام نکالنے کا معاملہ نیب اور وزارت داخلہ میں کھیل بن کر رہ گیا، ایک کے بعد ایک رپورٹ تیار،لیکن نوازشریف کا نام ای سی ایل سے نہ نکل سکا، نوازشریف کی صحت کیسی ہے؟ حکومت نے میڈیکل بورڈ سے پھر رپورٹ طلب کر لی، سرکاری میڈیکل بورڈ کا ہنگامی اجلاس بھی ہوا، ایک بار پھر حکومت کو واضح جواب دیا گیا کہ نوازشریف کی طبیعت انتہائی تشویشناک ہے، جنیٹک ٹیسٹ کی سہولت پاکستان میں میسر نہیں۔نیب نے وزارت داخلہ سے نوازشریف کی واپسی کی گارنٹی مانگ لی۔

ادھر نوازشریف کی لندن روانگی کا ٹکٹ بھی کنفرم ہوگیا، ذرائع کے مطابق نوازشریف پیر کی صبح 9 بجکر 5 منٹ پر براستہ قطر لندن روانہ ہوں گے، نوازشریف غیرملکی ایئرلائن کی پرواز کیو آر 629 سے لندن روانہ ہوں گے، شہباز شریف اور ڈاکٹر عدنان بھی نواز شریف کے ہمراہ ہونگے، ٹکٹ پر نوازشریف کی پاکستان واپسی کی تاریخ 27 نومبر درج ہے۔

میاں نوازشریف کے پلیٹ لیٹس مزید کمی کےبعد 18 ہزار رہ گئے ہیں، ڈاکٹرز کے مطابق میاں نوازشریف کی جان کو خطرہ ہے، میاں نوازشریف کاعلاج پاکستان میں ممکن نہیں۔طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ نوازشریف کو بیرون ملک لے جانے کیلئے ایئر ایمبولینس کااستعمال کیاجائے،عام پرواز سے سفر صحت کیلئے رسک ہوگا۔