طلال چودھری کی سزا کیخلاف انٹراکورٹ اپیل مسترد

طلال چودھری کی سزا کیخلاف انٹراکورٹ اپیل مسترد


اسلام آباد(24نیوز) سپریم کورٹ نے سابق وزیر مملکت طلال چودھری کی سزا کے خلاف انٹرا کورٹ اپیل مسترد کر دی، چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ ہمیں تو کافر بنا دیا گیا، عدالت کی اس سے بڑی توہین کیا ہوگی.

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار  کی سربراہی میں پانچ رکنی لارجر بنچ نے سابق وزیر مملکت برائے داخلہ طلال چوہدری کی توہین عدالت کیخلاف انٹرا کورٹ اپیل کی سماعت کی. طلال چودھری کی جانب سے وکیل کامران مرتضی عدالت میں پیش ہوئے، چیف جسٹس نے ویڈیو کلپ چلانے کا حکم دیا اور کہا کہ بلائیں طلال چودھری کو انہوں نے بت کس کو کہا، طلال چودھری کی سزا کتنی بڑھائی جائے؟
وکیل طلال چودھری کامران مرتضی نے عدالت سے استدعاکی کہ بچے سےغلطی ہوگئی، درگزر کیا جائے، چیف جسٹس نے طلال چودھری سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ والدین کا ایسے ادب کرتے ہو، نواز شریف وہاں موجود تھے طلال چوہدری کو نہیں روکا۔
چیف جسٹس نے ریمارکس میں کہا کہ طلال چودھری پہلے ق لیگ اوراب ن لیگ کیساتھ ہیں،کہا گیا کہ طلال چودھری برادری کا ہے معاف کر دیں، فیصلے برادریوں پرنہیں ترازو پرہوتے ہیں، عدالت نے طلال چودھری کی انٹرا کورٹ اپیل مسترد کرتے ہوئے سزا برقرار رکھنے کا حکم دیدیا۔
سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو میں طلال چوہدری نے کہا عمران خان جعلی وزیراعظم ہے، ریاست مدینہ کو بنے چند ہفتے ہوئے کہ یہود و نصاری سے امداد لینے پہنچ گئے۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔