انتظار قتل کیس: جے آئی ٹی رپورٹ، مدیحہ کیانی کا بیان، مقدس حیدر کی حقیقت

انتظار قتل کیس: جے آئی ٹی رپورٹ، مدیحہ کیانی کا بیان، مقدس حیدر کی حقیقت


کراچی (24نیوز) انتظارقتل کیس کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) کی رپورٹ منظرعام پر آ گئی۔ جے آئی ٹی نے ایس ایس پی مقدس حیدر کے خلاف محکمانہ کارروائی کی سفارش کر دی۔

24 نیوز کے مطابق 13 جنوری 2018 کو کراچی کے علاقہ ڈیفنس خیابان اتحاد میں کار پر پولیس اہلکاروں کی فائرنگ سے جاں بحق ہونے والے نوجوان انتظار احمد کے قتل کی جے آئی ٹی رپورٹ سامنے آ چکی ہے۔

یہ بھی پڑھئے:لیاری گینگ وار کے 16مطلوب دہشتگردوں کے سر کی قیمت مقرر

جے آئی ٹی رپورٹ کے مطابق مدیحہ کیانی کو نشہ آور اشیا کھلا کر بیان ریکارڈ کیا گیا۔ مدیحہ کیانی اور مقدس حیدر کے درمیان کوئی تعلق ثابت نہ ہو سکا۔ پولیس پارٹی نے قواعد و ضوابط کی سنگین خلاف ورزی کی۔ فائرنگ کرنے والے پولیس اہلکار سادہ لباس میں ملبوس تھے۔

واضح رہے کہ انتظار قتل کیس کی تحقیقات کے لیے بنائی گئی جے آئی ٹی کے مجموعی طور پر 6 اجلاس بلائے گئے۔ مقتول انتظار کے والد سمیت 17 افراد کے بیانات بھی قلمبند کیے گئے۔