جنسی زیادتی کے بعد 8سالہ بچی زندہ جلا دی گئی

جنسی زیادتی کے بعد 8سالہ بچی زندہ جلا دی گئی


  چیچہ وطنی (24نیوز) انسانیت کا سرشرم سے جھک گیا چیچہ وطنی میں 8سالہ بچی کوزیادتی کے بعد جلا ڈالاگیا۔  پولیس نے مقدمہ درج کرکے تحقیقات شروع کردیں۔ بچی کی نمازِجنازہ ادا کردی گئی۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب میں ایک کے بعدایک زیادتی کا واقعہ۔ سامنے آگیا۔ چیچہ وطنی میں 8 سالہ بچی کو درندگی کا نشانہ بنا کرجلادیا گیا۔

8 سالہ نورفاطمہ دوسری جماعت کی طالبہ تھی۔ بچی جب ورثاء کو ملی تو اس کا 90 فیصد جسم جھلس چکا تھا۔ ننھی سی جان کو پہلے ٹی ایچ کیو، پھر ڈی ایچ کیو ساہیوال اور پھر جناح اسپتال لاہور ریفرکردیا گیا۔ جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسی۔

یہ بھی پڑھیں:بہاولپوربڑی تباہی سے بچ گیا
 
بچی کی لاش کو پوسٹ مارٹم کے لئے ٹی ایچ کیو اسپتال منتقل کردیا گیا۔ ورثاء کے مطابق ڈاکٹرز نے بچی کے ساتھ زیادتی کی تصدیق کردی ہے۔ مزید تفصیلات فرانزک رپورٹ کے بعد منظر عام پر آئیں گی۔افسوسناک واقعے کے خلاف چیچہ وطنی میں مرکزی انجمن تاجران کی طرف سے مکمل شٹرڈاون کیا گیا۔ تحصیل بار کونسل چیچہ وطنی کے وکلاءبھی عدالتوں میں پیش نہیں ہوئے۔

دوسری طرف 8 سالہ نور فاطمہ کی نماز جنازہ ادا کردی گئی۔ نماز جنازہ میں دینی، سماجی، سیاسی شخصیات سمیت پولیس کے اعلی افسران نے شرکت کی۔