امریکہ نے پاکستان پر نئی سفارتی پابندیوں کا فیصلہ کر لیا

امریکہ نے پاکستان پر نئی سفارتی پابندیوں کا فیصلہ کر لیا


اسلام آباد (24نیوز) شہر اقتدار میں ہونے والے حادثہ کے ملزم امریکی سفارت کار کرنل جوزف کے خلاف سفارتی کارروائی پر پاک امریکہ سفارتی تناؤ میں اضافہ ہو گیا۔

سفارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ امریکہ پاکستان پر نئی سفارتی حدود وقیود عائد کرنے پر غور کر رہا ہے۔ یکم مئی سے امریکہ میں پاکستانی سفارتی عملہ پر پابندیوں کا امکان ہے۔

یہ بھی پڑھئے: امریکی ڈیفنس اتاشی کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کیلئے پولیس کا وزارت داخلہ کو خط

24 نیوز کے مطابق پاک امریکہ سفارتی تناؤ میں اضافہ ہو گیا ہے جس کی وجہ کرنل جوزف ہیں جنھوں نے اسلام آباد میں نوجوان کو اپنی گاڑی کی ٹکر سے موت کی بانہوں میں دھکیل دیا۔

پڑھنا نہ بھولئے: سفارتی اہلکار کی گاڑی کی ٹکرسے نوجوان کی ہلاکت، امریکی سفیر کی دفترخارجہ طلبی

یہ نہیں بلکہ امریکہ تو پاکستان پر نئی سفارتی حدود وقیود عائد کرنے پر غور کر رہا ہے۔ یکم مئی سے امریکہ میں پاکستانی سفارتی عملہ پر پابندیوں کا امکان ہے۔ امریکہ میں تعینات پاکستانی عملہ سفارتخانہ کے 40 کلومیٹر کے اندر گھوم سکتا ہے۔ 40 کلومیٹر سے باہر جانے کے لیے سفارتی عملہ کے لیے اجازت درکار ہوگی۔