پاکستان پرامن ملک،اسلحے کی دوڑ میں شامل نہیں:شاہ محمود قریشی



اسلام آباد(24نیوز)وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ  پاکستان پرامن ملک،اسلحے کی دوڑ میں شامل نہیں، بھارت سے مذاکرات کیلئے تیار ہیں۔

 تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا ہے کہ    پاکستان خطے میں ہتھیاروں کی دوڑ میں شامل نہیں۔ بھارت کی جانب سے ایس 400 بیلاسٹک میزائل خطے میں عدم توازن کا باعث بنے گا۔ این ایس جی کو بھی توازن کی پالیسی اپنانا ہوگی۔ وزیر خارجہ عالمی برادری کو خطے کی سٹریٹجک صورتحال کو سمجھنا ہوگا۔ پاکستان امن پسند ملک ہے۔

وزیر خارجہ پاکستان نے بھارت کو نیوکلئیر میزائل ہتھیاروں کے حوالے سے ایک تجویز دے رکھی ہے۔ اس تجویز کا بنیادی مقصد ہی ہتھیاروں کی دوڑ روکنا ہے۔  بھارت نے ابھی تک اس کا جواب نہیں دیا۔ بھارت کشمیریوں کو ان کا بنیادی حق خود ارادیت نہیں دے رہا۔ کشمیر میں بھارتی مظالم کے باعث تحریک زور پکڑ رہی ہے، پاکستان بھارت کو کشمیر سمیت تمام مسائل مذاکرات  کے ذریعے حل کرنے کی دعوت دیتا ہے، پاکستان بھارت کو غربت کے خاتمے سمیت تمام مسائل کیخلاف مشترکہ جدوجہد کی دعوت بھی دیتا ہے۔

وزیر خارجہ نے مزید کہا کہ  پاکستان نے کرتار پور راہداری کا قدم اٹھایا،چینی قونصل خانے پر حملے کے باوجود اس سے پیچھے نہیں ہٹا، بھارت نے اٹاری میں ہونے والے مذاکرات کا دوسرا دور ملتوی کیا، بھارت کو بتانا چاہتا ہوں کہ مسائل کا واحد حل مزاکرات ہی ہوا کرتے ہیں۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer