مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد بھی 18ویں ترمیم کے مخالف نکلے

مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد بھی 18ویں ترمیم کے مخالف نکلے


اسلام آباد(24 نیوز) مشیر تجارت عبدالرزاق داؤدبھی18 ویں ترمیم کے مخالف نکلے، مشیرتجارت کا کہنا ہے 18 ویں ترمیم کے بعد اشیا کے اسٹینڈرڈ کا مسئلہ ہوا، 18 ویں ترمیم کے بعد صوبوں نے اسٹینڈرڈ پر توجہ نہیں دی،اب وفاق اسٹینڈرڈ طے کرے گا اور صوبے مانیٹر کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق مشیر تجارت رزاق داؤد نے پاکستان میں ناقص اسٹینڈرڈز کا ملبہ اٹھارویں آئینی ترمیم پر ڈال دیا.  کہتے ہیں کہ صوبوں نے اشیاء اور مشینری کے اسٹینڈرڈز پر توجہ نہیں دی مگر اب وفاق سارے اسٹینڈرڈز اور سرٹیفیکیٹس جاری کرے گا۔ مشیر تجارت کاکہناتھا وزیر اعظم کے دورہ چین میں آزادانہ تجارتی معاہدے پر خوشخبری ملے گی۔ چین سے ایک ارب ڈالر کی مزید برآمدات کی سہولت ملنے کا امکان ہے۔

مشیرتجارت نےمزیدکہا کہ مارچ کے دوران برآمدات میں کمی کےباوجود 25ارب ڈالر کا ہدف حاصل کرلیا جائے گا۔