مقبوضہ کشمیر میں پانچویں روزبھی کرفیو

مقبوضہ کشمیر میں پانچویں روزبھی کرفیو


(24 نیوز) مقبوضہ کشمیرمیں پانچویں روزبھی کرفیورہا، چین نےبھی پاکستان کی دوٹوک حمایت کااعلان کردیا،چینی وزارت خارجہ نےکہاکہ مسئلہ کشمیرکی صورتحال پرسنجیدہ خدشات ہیں،ادھرآزادکشمیرکل جماعتی کانفرنس میں بھارت سےتمام معاہدےختم کرنےکامطالبہ کردیاگیا۔

 مقبوضہ کشمیرمیں پانچویں روزبھی لاک ڈاؤن رہا،سخت ترین کرفیوکےباعث شہریوں کے پاس کھانے پینے کی اشیاختم ہوگئیں،وادی میں دکانیں بندہیں،خاردار تاریں لگاکرعلاقے کو دوسرےعلاقےسےعلیحدہ کردیاگیا وادی میں میڈیا کابلیک آؤٹ جبکہ اخبارات کی ترسیل،انٹرنیٹ،موبائل سروس اورتمام تعلیمی ادارے بند ہیں۔

مقبوضہ کشمیرکی موجودہ صورتحال پرچین نے بھی خدشات کا اظہارکرتےہوئےپاکستان کی دوٹوک حمایت کا اعلان کردیا،وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی کی چینی ہم منصب سےملاقات کے اعلامیےمیں کہا گیا چین عالمی سطح پرپاکستان کےقانونی حقوق کیلئےحمایت جاری رکھےگا،مسئلہ کشمیراقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کیاجائے۔

اقوام متحدہ میں پاکستان کی مستقل مندوب ڈاکٹرملیحہ لودھی نے کہا کہ بھارتی فوج نہتے مظلوم کشمیریوں پر مظالم ڈھارہی ہے،وادی میں کرفیولگانابھارت کاغیرقانونی اقدام ہے۔

دوسری جانب وزیراعظم آزادکشمیرراجافاروق حیدرکی زیرصدارت کل جماعتی کشمیرکانفرنس ہوئی،مشترکا اعلامیہ میں کہاگیاپاکستان بھارت سےتمام دوطرفہ معاہدوں سےدستبردارہونےکااعلان کرے۔ اعلامیےمیں کہاگیااقوام متحدہ سمیت عالمی اداروں کومتحرک کرنےکی جارحانہ سفارتی مہم شروع کی جائے.