جدا جدا راستے اختیار نہ کئے جائیں، ایک دوسرے کیلئے مغفرت کی دعا کریں: خطبہ حج

جدا جدا راستے اختیار نہ کئے جائیں، ایک دوسرے کیلئے مغفرت کی دعا کریں: خطبہ حج


مکہ مکرمہ (24نیوز) الشیخ محمد بن حسن آل شیخ نے مسجد نمرہ سے خطبہ حج دیا، خطبہ حج میں کہا مسلمانوں کوتقویٰ کا راستہ اختیار کرنا چاہئے۔

الشیخ محمد بن حسن آل شیخ نے خطبہ حج کے موقع پر کہا کہ اسلام رحمت کا دین ہے،اللہ نے قرآن میں فرمایا جدا جدا راستے اختیار نہ کئے جائیں، اللہ اور رسولﷺ کی اطاعت کرو۔ اللہ کی توحیداور وحدانیت کومضبوطی سے پکڑنا چاہئے، اللہ نے قرآن میں فرمایا جدا جدا راستے اختیار نہ کئے جائیے، اللہ کا فضل نہ ہوتا تو سب شیطان ہی کی اتباع کرتے،خطبہ حج میں اپنے والدین کے ساتھ بھلائی کا راستہ اختیار کرنے کی ہدایت کی گئی۔

انھوں نے کہا گناہ جتنے بھی ہوجائیں اللہ کی رحمت سے ناامیدنہ ہوں۔ مومن ایک دوسرے کے لئے مغفرت کی دعا کرےمعاشرے میں مختلف امور میں رحم دلی اختیار کرنی چاہئے۔اللہ کی بات کبھی تبدیل نہیں ہوتی،اللہ تعالیٰ نے اہل تشکرکے لئے کھول کھول کر نشانیاں بیان کی ہیں۔گواہی دیتا ہوں اللہ کے سوا کوئی عبادت کے لائق نہیں،مسلمانوں کوتقویٰ کا راستہ اختیار کرنا چاہئے،تلاوت کلام پاک کی عادت بنائیں۔

خطبہ حج کے بعد عازمین حج مسجد نمرا میں یکے بعد دیگرے باجماعت نماز ظہر اور نماز عصر کی نمازیں ادا کریں گے۔عازمین حج مغرب تک میدان عرفات میں قیام کریں اور مغرب ہوتے ہی نماز ادا کئے بغیر مزدلفہ کی جانب روانہ ہوجائیں گے۔ عازمین حج مزدلفہ پہنچ کر مغرب اور عشاٗ کی نمازیں ایک ساتھ ادا کریں گے، اور رات قیام کے دوران عبادت کے ساتھ شیاطین کو مارنے کے لئے کنکریاں بھی جمع کریں گے۔ اتوار کی صبح عازمین حج کی منیٰ واپسی ہوگی جہاں شیطان کو کنکریاں مار کر قربانی دیں گے اور سر مونڈھ کر احرام کھول لیں گے۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔