'میں سانس نہیں لے سکتا' سعودی صحافی جمال خشوگی کےمرتے وقت آخری الفاظ

'میں سانس نہیں لے سکتا' سعودی صحافی جمال خشوگی کےمرتے وقت آخری الفاظ


( 24 نیوز ) امریکی نشریاتی ادارے سی این این نے اپنی رپورٹ میں دعویٰ کیا ہے کہ مقتول سعودی صحافی جمال خشوگی   کو قتل کیے جانے کے وقت ان کے آخری الفاظ 'میں سانس نہیں لے سکتا' تھے، سی این این نے آخری لمحات کی آڈیو ریکارڈنگ کا ترجمہ جاری کردیا۔

سی این این کا ذرائع کے حوالے سے بتانا ہے کہ جمال خاشقجی کے آخری لمحات کی آڈیو ریکارڈنگ کی ترجمہ کی گئی تحریر ان کے ذرائع نے پڑھی ہے جس میں صحافی کو قتل کیے جانے کے منظر کو محسوس کیا جاسکتا ہے۔ اس سے قبل ترکی نے کہا تھا کہ اس نے سعودی صحافی جمال خاشقجی کی موت سے متعلق آڈیو ریکارڈنگ امریکا اور سعودی عرب سمیت کئی ممالک کو مہیا کی ہیں۔

سی این این کی رپورٹ کے مطابق جمال خاشقجی آخری لمحات میں ان لوگوں کے خلاف مزاحمت کر رہے تھے جو انہیں قتل کرنے کا ارادہ رکھتے تھے اور انہوں نے کئی بار کہا کہ 'میں سانس نہیں لے سکتا'۔ رپورٹ کے مطابق آڈیو ریکارڈنگ میں جمال خاشقجی کے جسم کے ٹکڑے کیے جانے کی آوازیں بھی سنی جاسکتی ہیں۔رپورٹ میں ذرائع کے حوالے سے بتانا ہے کہ جمال خاشقجی کو قتل کیے جانے کے دوران کئی فون کالز بھی آئیں جس میں پیش رفت سے متعلق آگاہ کیا جاتا رہا۔