دعا منگی کے اغوا کاروں نے کیا طریقہ واردات اپنایا؟اہم انکشافات

دعا منگی کے اغوا کاروں نے کیا طریقہ واردات اپنایا؟اہم انکشافات


کراچی(دانیال سید) میں دعا منگی کا اغوا اور پرسرار رہائی کے معاملے میں اغوا کاروں کا طریقہ واردات کیا ہے؟ 24 نیوز نے پتا لگا لیا , اغوا کار تاوان کی رقم وصول کرنے کیلئے پیڈیسٹیرئن پل استعمال کرتے رہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں 30 نومبر کی رات ڈیفنس خیابان بخاری کمرشل سے دعا منگی کا اغوا اور 7 دسمبر کو پرسرار رہائی کے معاملے میں اغوا کاروں کا طریقہ واردات کیا ہے, 24 نیوز نے پتا لگا لیا اغوا کار تاوان کی رقم وصول کرنے کیلئے پیڈیسٹیرئن پل استعمال کرتے ہیں۔

دعا منگی کے اہل خانہ سے کورنگی روڈ پر واقعے پیڈیسٹیرپن پر تاوان کی رقم لی گئی , رات کے اندھیرے میں پیسے وصول کئے گئے, تفتیشی زرائع کا کہنا ہے کہ دعا کو جس جگہ رکھا وہاں دن رات موسیقی چلائی جاتی تھی, اونچی آواز میں موسیقی چلنے کے باعث دعا کو اغوا کاروں کی آواز سنائی نہیں دیتی تھی۔

حکام کے مطابق چند ماہ قبل ڈیفنس سے بسمہ نامی لڑکی کے رہائی کیلئے بھی اہل خانہ سے پیڈیسٹیرئن پر تاوان کی رقم لی تھی, بسمہ کو اغوا کے بعد جہاں رکھا گیا وہاں بھی دن بھر موسیقی چلائی جاتی تھی۔

تفتیشی ذرائع کے مطابق دعا اور بسمہ کے اغوا اور رہائی کی وارداتوں میں بڑی حد تک مماثلت ہے, دوسری جانب کیس کی جوائنٹ انٹیرو گیشن ٹیم دعا منگی کا آج بیان ریکارڈ کرے گی، دعا کے والد سے بھی جوائنٹ انٹیرو گیشن ٹیم ملاقات کرے گی۔