لاہوریوں کیلئے خوشخبری، اورنج ٹرین چل پڑی



لاہور(24نیوز) لاہوریوں کا انتظار ہوا ختم، پہلی بار اورنج ٹرین کو بجلی سے مکمل روٹ پر آزمائشی طور پر چلایا گیا، مریم اورنگزیب کہتی ہیں کہ حکمران بےشرمی اور ڈھٹائی سے ہمارے منصوبوں پر اپنے نام کی تختیاں لگا رہے ہیں۔

اورنج لائن نے بالآخر اپنے مکمل روٹ پر پہلا ٹیسٹ مکمل کر لیا، ٹرین ڈیرہ گوجراں سے علی ٹاؤن تک 27 کلو میٹر کا فاصلہ 45 منٹ میں طے کرے گی مگر شہریوں کو ٹرین پر سفر کرنے کے لیے ابھی مزید 3 ماہ کا انتظار کرنا پڑے گا۔بجلی سے چلنے والی اورنج ٹرین مکمل آٹومیٹک ہے، اس میں 200مسافروں کے بیٹھنے اور 800 کے کھڑے ہونے کی گنجائش ہے۔

ترجمان ن لیگ مریم اورنگزیب کہتی ہیں کہ حکمران بےشرمی اور ڈھٹائی سے ہمارے منصوبوں پر اپنے نام کی تختیاں لگا رہے ہیں،  دس سال جس میٹرو اور اورنج لائن ٹرین پر آپ سیاست کرتے رہے، آج اس کے فیتے کٹوا رہے ہیں۔ادھر سینئر صحافی حامد میر نے ٹوئٹر پر ایک کارٹون شیئر کرتے ہوئے کہا کہ اب تک بی آر ٹی مکمل نہیں ہو سکی۔

سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے 4 سال 4 ماہ قبل اگست2015ء میں اورنج لائن ٹرین کا کام شروع کرایا تھا۔ایک ارب 62 کروڑ ڈالر کی لاگت کے اس منصوبے کو دسمبر2017ء میں مکمل ہونا تھا لیکن عدالتی حکم امتناعی اورحکومتوں کی تبدیلی کے باعث یہ منصوبہ دوسال کی تاخیر کا شکار ہوا۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔