خیبر پختونخوا احتساب کمیشن کی شہ خرچیاں،4 سالوں میں کروڑوں اڑا دئیے

خیبر پختونخوا احتساب کمیشن کی شہ خرچیاں،4 سالوں میں کروڑوں اڑا دئیے


پشاور (24 نیوز) احتساب کرنے والے خود شہ خرچ نکلے۔ خیبر پختونخوا احتساب کمیشن نے چار سالوں میں کروڑوں روپے اڑا دئیے۔ کرپٹ افراد سے ایک پائی بھی وصول نہ کی گئی۔

تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف کی جانب سے سال 2014 میں کرپشن کی روک تھام کے لیے بنائے جانے والا ادارہ خیبرپختونخوا احتساب کمیشن نے چار سال میں سرکاری خزانہ سے کروڑوں روپے خرچ کر ڈالے لیکن ریکوری ایک پائی کی بھی نہ کی۔

یہ بھی پڑھئے: بنی گالا میں عمران خان کے گھر جانیوالے رستہ پر شہریوں کا دھرنا

کمیشن نے چار سال میں 52 کروڑ سے زائد تنخواہوں، بلڈنگز کے کرائے پر ماہانہ 6 لاکھ اور ٹرانسپورٹیشن پر پانچ لاکھ سے زائد اور کروڑوں کی دیگر اخراجات کیے لیکن نتیجہ صفر رہا۔

ضرور پڑھئے : نیب اور پنجاب حکومت آمنے سامنے آگئے

مختلف مکاتب فکر کی جانب سے احتساب کمیشن کی کارکردگی کے حوالے سے پہلے ہی تحفظات کا اظہار کیا جاتا رہا ہے۔ حالیہ صورتحال میں کروڑوں روپے کے اخراجات اس ادارے کی شفافیت پر ایک اور سوالیہ نشان ہیں۔