گرین لائن منصوبہ درد سر بن گیا

گرین لائن منصوبہ درد سر بن گیا


کراچی(24نیوز) شہرقائدمیں وفاق کی جانب سے تحفہ قراردیاگیاگرین لائن منصوبہ تعطل کاشکار ہوگیا، لاگت میں اربوں روپے کامزید اضافہ ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت کی جانب سے کراچی میں شروع ہونے گرین لائن منصوبہ لٹک کررہ گیا،منصوبہ نوازشریف دورمیں فروری 2016 میں شروع ہوا،16 ارب 85 کروڑ روپے مالیت کا 21 کلومیٹرطویل منصوبہ دسمبر 2017 میں مکمل ہونا تھا،منصوبے کی تاخیر سے لاگت 24 ارب روپے سے تجاوز کر گئی، جبکہ سفر کی سہولت فراہم کرنے والی بسیں تاحال کاغذوں پر ہی سفر کر رہی ہیں، گرین لائن میٹرومنصوبے کے لیے بسیں کون خریدے؟سندھ ،وفاقی حکومت فیصلہ نہیں کرسکے ۔

وزیراعظم عمران خان نے گرین لائن میٹرو کےلیے بسیں فراہم کرنے کا اعلان کیاتھا، علاوہ ازیں وفاق نے15دسمبر کو گرین لائن میٹروبس کا ٹریک سندھ حکومت کے حوالے کرنے کی یقین دہانی کرائی تھی،گزشتہ دنوں سندھ ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کے اجلاس میں بھی منصوبے کے حوالےسے کوئی پیش رفت نہ ہوسکی،ٹریک ابھی تک سندھ حکومت کےحوالےنہیں کیاگیا، منصوبے پر23فیصد تعمیراتی کام باقی ہے۔

نمائش تاتبت سینٹرانڈرپاس کی تعمیرمارچ تک مکمل کرنے کااعلان کیاگیاتھا، منصوبہ تعطل کاشکارہونے سے شہرقائدمیں ٹریفک کے مسائل گھمبیرہوتے جارہے ہیں۔

M.SAJID KHAN

CONTENT WRITER