زینب لرزہ خیز قتل: سماجی رہنما مختاراں مائی کی شدید الفاظ میں مذمت

زینب لرزہ خیز قتل: سماجی رہنما مختاراں مائی کی شدید الفاظ میں مذمت


علی پور (24 نیوز) سماجی رہنما مختاراں مائی نے کہا ہے کہ پہلے بھی قصور میں دس سے زیادہ زیادتی کے واقعات ہوچکے ہیں اگر وہ مجرم پکڑے جاتے اور ان کو سزا ملتی تو یہ سانحہ نہ ہوتا۔

24 نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے سماجی رہنما مختاراں مائی نے قصور میں کم سن بچی کے ساتھ زیادتی اور لرزہ خیز قتل کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پہلے بھی قصور میں دس سے زیادہ زیادتی کے واقعات ہوچکے ہیں اگر وہ مجرم پکڑے جاتے اور ان کو سزا ملتی تو یہ سانحہ نہ ہوتا۔

مختاراں مائی نے مزید کہا کہ حکومت کے صرف بڑے بڑے دعوے ہیں، عملی اقدام کچھ نہیں ہے۔ میں پوچھتی ہوں کے آج ملزمان کا نام کیوں نہیں لیا گیا؟ وہ اب تک آزاد کیوں ہیں۔

واضح رہے کہ زینب کو اغوا کے بعد زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کیا گیا تھا۔