بھارتی پولیس کی دندرگی انتہا کو پہنچ گئی،خواتین پر ڈنڈوں سے تشدد

بھارتی پولیس کی دندرگی انتہا کو پہنچ گئی،خواتین پر ڈنڈوں سے تشدد


نئی دہلی ( 24نیوز )بھارت میں شہریت کے متنازعہ قانون کے خلاف احتجاج شہر شہرپھیل گیا،دہلی میں جواہر لعل نہرو یونیورسٹی کے طلبہ کےاحتجاج پرپولیس نے ایک بارپھردھاوابول دیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارت میں متنازعہ شہریت قانون پرعوام کا غم وغصہ کم ہونے کا نام نہیں لے رہا،  نئی دہلی پولیس نے جواہرلعل نہرو یونیورسٹی کے طلبہ پر تشدد کیخلاف احتجاج کرنے والے مظاہرین کو بھی تشدد کا نشانہ بنا ڈالا، بھارتی پولیس نے مظاہرے میں شریک خواتین کو بھی نہ بخشا اور خوب ڈنڈے برسائے،پولیس تشدد سے متعدد مسلمان طلبہ زخمی ہوگئے جبکہ تیس سے زائد طلبہ کو حراست میں لے لیا گیا۔

دوسری طرف متنازعہ قانون کے خلاف احتجاج شہرشہرپھیل گیا،آسام کے شہر گھوٹی کے اسٹیڈیم میں وزیراعلیٰ کے خلاف نعرے لگ گئے۔احتجاج میں فری کشمیر کےنعرے اوربینرزبھی نظرآئے۔

اُدھر گیٹ وے آف انڈیا سے شروع ہونے والی ریلی اترپردیش سے راجستھان اوراب ہریانہ پہنچ گئی ہے،تیس جنوری کو یہ ریلی دلی راج گھات پر ختم ہوگی۔