حصول قرضہ کیلئے حکومت نے آئی ایم ایف کو کیا یقین دہانیاں کرائیں

حصول قرضہ کیلئے حکومت نے آئی ایم ایف کو کیا یقین دہانیاں کرائیں


اسلام آباد( 24نیوزحکومت نے کیا کیا یقین دہانیاں کرائیں، آئی ایم ایف نےسب بتادیا،اسٹیٹ بینک اورنیپرا کی خود مختاری کا بل پارلیمنٹ میں پیش کیاجائےگا۔

تفصیلات کے مطابق عالمی مالیاتی ادارے آئی ایم ایف نے پاکستانی معیشت پر نئی رپورٹ جاری کردی،جس کے مطابق پاکستان کو بجلی کےفی یونٹ نرخ میں ڈھائی روپےبڑھاناہوں گے،300 یونٹ ماہانہ بجلی استعمال کرنےوالےصارفین کو سبسڈی دی جائیگی،نیاٹیرف اگست2019میں جاری کیاجائےگاجبکہ2020کیلئےبجلی کانیا ٹیرف ستمبر 2019 میں جاری کرناہوگا۔

رپورٹ کےمطابق گیس سیکٹرکےواجبات کی وصولی یقینی بنائی جائےگی،اس حوالےسےپلان ستمبر 2019 میں پیش کیاجائے گا،اسٹیٹ بینک،نیپرا کی خود مختاری کابل پارلیمنٹ میں پیش کیا جائے گاجبکہ گردشی قرضےکےخاتمےکاپروگرام اوراوگراکی خودمختاری کاترمیمی بل ایوان میں پیش کیا جائے گا.

رپورٹ کےمطابق 2020 میں پاکستان کی جی ڈی پی2.4 فیصداور2021 میں پاکستان کی جی ڈی پی3 فیصد رہےگی،رواں سال مہنگائی کی شرح13 فیصد جبکہ اگلے سال پاکستان میں مہنگائی کی شرح 8.3 فیصد رہے گی،رواں سال پاکستان کا بجٹ خسارہ 7.3 فیصد اور اگلے سال پاکستان کا بجٹ خسارہ 5.4 فیصد رہے گا۔۔

رپوررٹ میں مزید کہا گیا کہ مستقبل قریب میں معاشی شرح نمو میں کمی کا امکان ہے،پاکستان نے ریئل اسٹیٹ سیکٹر اور زرعی آمدن پر ٹیکس لگانے، پراپرٹی کی قیمتیں مارکیٹ ویلیوکےقریب لانےکی یقین دہانی کرائی ہے جب کہ سگریٹ،چینی اورسیمنٹ پرایکسائزڈیوٹی،درآمدی گیس اورلگژری اشیاء پرایڈیشنل کسٹمزڈیوٹی بڑھانےکا فیصلہ کیا۔