تبدیلی آ نہیں رہی تبدیلی آگئی ہے، تھرپارکر سے پہلی ہندو خاتون الیکشن لڑے گی

تبدیلی آ نہیں رہی تبدیلی آگئی ہے، تھرپارکر سے پہلی ہندو خاتون الیکشن لڑے گی


تھرپارکر( 24 نیوز ) تھرپار کر سے پہلی ہندو خاتون نے کاغذات نامزدگی جمع کرادیے، علاقہ میں پہنچنے پر سنیتا پرمار کا شاندار استقبال، سنیتا پی ایس 56 سے آزاد امیدوار کی حیثیت سے لڑیں گی، خواتین کسی سے کم نہیں، تھری خاتون سنیتا پرمار نے بتادیا۔ اب تھر میں تعلیم بھی ہوگی اور حقوق بھی ملیں گے۔ سنیتا کا وعدہ

 یہ خبر بھی پڑھیں: الیکشن سے قبل پی ٹی آئی کو بڑی مشکلات کا سامنا، اب کیا ہوگا؟ کپتان پریشان

24 نیوز ذرائع کے مطابق وڈیرا سسٹم کے خلاف تھری خاتون میدان میں آگئی۔ تھرپارکر کے حلقہ اسلام کوٹ، پی ایس 56 سے آزاد امیدوار کی حیثیت سے سنیتا پرمار نے کاغذات جمع کروادئیے، گھر پہنچنے پر سنیتا کا ڈھول کی تھاپ کے ساتھ شاندار استقبال کیا گیا۔

سنیتا پرمار بچوں کو پڑھانے کی شوقین تو ہیں ہی، ساتھ ساتھ گھر کے کام کاج بھی سرانجام دیتی ہیں۔ جن کا خواب تھا کہ خواتین کو تعلیم، صحت سمیت دیگر حقوق ملیں۔  اسی لیے فیصلہ کیا کہ اسمبلی میں حقوق کے لیے آواز بلند کریں گی۔ تھری خواتین نے بھی سنیتا سے امیدیں باندھ لیں۔ اور لوک گیت گاکر خراج تحسین پیش کیا۔ سنیتا پرمار نے حلقہ میں انتخابی مہم کا آغاز بھی کردیا۔ تھری خواتین کا کہنا ہے کہ پسماندہ علاقہ سے خاتون کا الیکشن لڑنا خوش آئند ہے۔