ایف بی آر ہدف حاصل کرنے میں ناکام ہوگیا

ایف بی آر ہدف حاصل کرنے میں ناکام ہوگیا


اسلام آباد(24نیوز)ایف بی آر رواں مالی سال کے دوران اپنا ٹیکس ٹارگٹ حاصل کرنے میں ناکام رہا ۔ ایف بی آر کے محصولات میں گذشتہ برس میں صرف تین فیصد اضافہ ہوا ہے ، ایف بی آر کی کارکردگی خراب ترین رہی ہے ۔

رواں مالی سال کے دوران ایف بی آر کو 4398 ارب روپے کا ٹیکس ٹارگٹ دیا گیا، جولائی سے مئی تک ایف بی آر نے 3340 ارب روپے ٹیکس اکٹھا کیا، 11 ماہ میں ایف بی آر کو 460 ارب روپے کے ٹیکس شارٹ فال کا سامنا کرنا، پڑا ایف بی آر کو مقررہ ہداف حاصل کرنے کے لیے جون میں 760 ارب روپے کا ٹیکس اکٹھا کرنا ہوگا ۔ماہرین کا کہنا ہے کہ خراب ملکی معاشی صورتحال کے باعث ایف بی آر اپنا ہدف حاصل نہیں کرپارہا ۔

ٹیکس ماہرین کا کہنا ہے کہ سابقہ حکومت نے ایف بی آر کا ٹیکس ٹارگٹ غلط مقرر کیا ، تنخواہ دار طبقے کو 90 ارب روپے کی ٹیکس چھوٹ دی گئی ، موبائل فون کے کارڈ پر ٹیکس کٹوتی روکنے سے 100 ارب روپے کا نقصان ہوا ، درآمدات میں کمی اور ترقیاتی منصوبوں کی سست روی کے باعث ٹیکس اہداف پورے نہیں ہوئے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ ایف بی آر کو اپنی آمدن بڑھانے کے لیے نئے لوگوں کو ٹیکس نیٹ میں شامل کرنا پڑے گا۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer