آپ مجھے ٹینشن میں نظر آرہے ہیں، اعتزاز احسن کا چیف جسٹس آف پاکستان سے مکالمہ

آپ مجھے ٹینشن میں نظر آرہے ہیں، اعتزاز احسن کا چیف جسٹس آف پاکستان سے مکالمہ


لاہور(24نیوز) غیرمعیاری خشک دودھ کے خلاف ازخود نوٹس کی سماعت، چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں 3رکنی بنچ نےسماعت کی۔ اعتزاز احسن مقامی کمپنی کی جانب سے عدالت میں پیش ہوئے۔  

 تفصیلات کے مطابق غیر معیاری خشک دودھ پر ازخود نوٹس کی سماعت سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں ہوئی، سماعت کے دوران چیف جسٹس اور اعتزاز احسن میں مکالمہ بازی بھی ہوئی، اعتزاز احسن نے چیف جسٹس سے گلہ کیا کہ ایک دن عدالت میں پیش نہیں ہوا، آپ نے دس ہزار روپے جرمانہ کر دیا، مجھے تو کبھی اسکول میں دس روپے کا جرمانہ نہیں ہوا۔ اعتزازاحسن نے کہا کہ اسلام آباد میں سیینٹرزکی الوداعی تقریب میں مصروف تھا، مصروفیت کی وجہ سے سماعت ملتوی کرنے کی استدعا کی۔ چیف جسٹس نے کہا کہ آپکونہیں آپ کےایسوسی ایٹ کوجرمانہ کیا،آرڈرمیں نہیں لکھا، جس پر اعتزاز احسن نے کہا کہ ایسوسی ایٹ کوبھی کیوں جرمانہ کیا آپ نےآرڈرمیں بھی لکھ دیناتھا۔ چیف جسٹس نے کہا آپ کہتے ہیں تو آپ کےاصرارپرآرڈر میں بھی لکھ دیتا ہوں۔

یہ بھی پڑھیں: جو حکومت نے کام نہیں کئے انکا بھی اشتہار دے دیں:چیف جسٹس

اعتزازاحسن  نے کہا چیف جسٹس صاحب آ پ مجھے ٹینشن میں لگتے ہیں، چیف جسٹس نے کہا میں ٹینشن میں نہیں ہوں آپ کوکس نے کہا؟ اعتزازاحسن نے جواب دیا نظرآرہا ہے آپ ٹینشن میں ہیں۔ چیف جسٹس آف پاکستان نے کہا ایسوسی ایٹ نےاعتزازاحسن کےچیمبرکارعب دکھایا، جورعب جھاڑےگا تو میں جونیئر،سینئروکیل کی تمیزنہیں کروں گا، جرمانہ ختم نہیں ہو سکتا آپ کہتے ہیں تو جرمانہ میں ادا کر دیتا ہوں۔

چیف جسٹس آف پاکستان نے فارمولاملک کیس کی سماعت 24مارچ تک ملتوی کردی۔ 

ویڈیو دیکھیں: