سندھ کا 11 کھرب 42 ارب روپے سے زائد کا ٹیکس فری بجٹ آج پیش ہوگا

سندھ کا 11 کھرب 42 ارب روپے سے زائد کا ٹیکس فری بجٹ آج پیش ہوگا


کراچی( 24نیوز ) سندھ کا سال 2018-19 کے لئے 11 کھرب 42 ارب روپے سے زائد کا ٹیکس فری بجٹ آج پیش ہوگا، بجٹ میں صوبائی ترقیاتی پروگرام کے لئے 270 ارب، تعلیم کے لئے 203، صحت کے لئے 102 اور امن امان کے لئے 93 ارب روپے رکھے جائیں گے۔
سندھ کا سال 2018-19 کے لئے بجٹ آج سندھ اسمبلی میں پیش کیا جائے گا، وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ بجٹ پیش کریں گے، بجٹ کا مجموعی حجم 11 کھرب 42 سے زائد کا ہوگا، جس میں 344 ارب روپے ترقیاتی اور 770 ارب روپے سے زائد اخراجات کے لئے مختص کیا جائے گا، بجٹ کا کل خسارہ 22 ارب روپے ہوگا۔۔ سندھ بجٹ میں کوئی بھی نیا ٹیکس نہ لگانے کا فیصلہ کرلیا گیا ہے، جبکہ سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پینشن میں دس فیصد کا اضافہ بھی بجٹ کا حصہ ہوگا۔۔

پڑھنا نہ بھولیں:اللہ نہ کرے ہماری قسمت عمران خان کی طرح ہو

سندھ کو وفاقی محاصل سے 665 ارب روپے ملیں گے جبکہ بجٹ میں صوبائی وصولیوں کا ہدف 103 اعشاریہ 27 ارب روپے مقرر کیا گیا ہے، بجٹ میں صوبائی ترقیاتی پروگرام کے لئے 270 ارب روپے، تعلیم کے لئے 203 ارب، صحت کے لئے 102 ارب جبکہ امن امان کے لئے 93 ارب روپے مختص کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔۔
بجٹ میں ضلعی ترقیاتی پروگرام کے لئی30 ارب روپے مختص کیے جانے کا امکان ہے جبکہ کراچی میں اہم سڑکوں، پلوں، فلائی اوورز اور انڈرپاسز کی تعمیر کے لیے 15ارب روپے رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔
بجٹ میں سندھ پولیس، روینیو، صحت اور دیگر محکموں میں 12 ہزار ملازمین بھرتی کرنے کی بھی تجویز دی گئی ہے ۔