چونا لگ گیا ، پی آئی اے ’’لٹی گئی‘‘

چونا لگ گیا ، پی آئی اے ’’لٹی گئی‘‘


اسلام آباد(24نیوز) ترجمان ایوی ایشن شیر علی خان نے بھی بہتی گنگا میں ہاتھ دھو ڈالے،چیف ایگزیکٹو آفیسر اورچیف کمرشل آفیسر پی آئی اے کے بعد ترجمان ایوی ایشن کیخلاف بھی آڈٹ اعتراضات سامنے آگئے۔

تفصیلات کے مطابق آڈٹ اعتراضات میں ترجمان شیر علی کی جانب سے خوربرد کا انکشاف ہوا۔ ترجمان ایوی ایشن ڈویژن نے صحافیوں کوتحائف اور اخراجات کے نام پر پی آئی اے سے 16 لاکھ بٹور لیے۔آڈٹ رپورٹ نے تمام بلوں کا جعلی اور مشکوک قرار دیدیا۔  آڈٹ رپورٹ سے شیر علی خان نے جعلی بلوں کے زریعے قومی خزانے کو نقصان پہنچایا۔

 آڈٹ دستاویزات کے مطابق ترجمان ایوی ایشن نے16 لاکھ روپے جعلی بلوں کی مد میں خرانے کو چونا لگایا۔ آڈٹ دستاویزات نے تمام بلوں کومشکوک قرار دیدیا۔ پی آئی اے کے ترجمان مشہود تاجر بھی ادائیگیوں سے لاعلم رہے۔ جعلی بل چوری کے زمرے میں آتے ہیں۔ آڈیٹر جنرل نےشیر علی خان کےخلاف محکمانہ کاروائی کی سفارش کر دی گئی۔

یہ بھی پڑھیں:شہید ذولفقار علی بھُٹو کا ایسا کارنامہ جو ہمیشہ پاکستانی تاریخ کے ماتھے کا جھومر رہے گا 

  ذرائع کے مطابق آڈٹ رپورٹ بھی کوڑے کی ٹوکری کا حصہ بن جائے گئی اور شیر علی ایسے ہی قومی خزانے کو لوٹنے میں مصروف رہیں گئے کیونکہ شیر علی مشیر ہوابازی کے ساتھ گہرے مراسم ہیں۔ جس کی وجہ سے 4 سالوں میں تیسری ترقی کی تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔