محکمہ ایجوکیشن اتھارٹی کی نا اہلی سامنے آگئی

محکمہ ایجوکیشن اتھارٹی کی نا اہلی سامنے آگئی


لاہور(24نیوز) محکمہ ایجوکیشن اتھارٹی کی نااہلی سامنےآ گئی، مخلوط تعلیم ختم کر دی مگر متبادل انتظام نہیں کیا، شاہدرہ کے دو سرکاری سکولوں سے 450 طالبات کو فارغ کرنے پر والدین نے شدید احتجاج کیا۔

تفصیلات کے مطابق شاہدرہ کے دو سرکاری سکولوں سے 450 طالبات کو مخلوط تعلیمی نظام کے باعث فارغ کر دیا گیا ہے۔ گورنمنٹ مغیلہ پارک سکول سے 250 طالبات کو جبکہ گورنمنٹ اصلاح معاشرہ سکول سے 200 سے زائد چھٹی، ساتویں اور آٹھویں جماعت کی طالبات کو سرٹفیکیٹ دے کر فارغ کیا گیا۔ جس پر انکے والدین نے سکول کے باہر شدید احتجاج کیا۔

یہ بھی پڑھیں:آرمی چیف سے زندگی ٹرسٹ کے طلبہ و طالبات کی ملاقات، طالبہ کیساتھ شطرنج بھی کھیلی
 
والدین کے مطابق سکول انتظامیہ کا کہنا ہے کہ پانچویں جماعت تک لڑکے اورلڑکیاں اکھٹے پڑھ سکتے ہیں، اس لیے پانچویں جماعت سے اوپر کو ایجوکیشن کلاسسز کو ختم کیا جارہا ہے۔ والدین کا کہنا ہے کہ لڑکیاں دور دراز نہیں جاسکتی، اس لیے ہم بچیوں کو اسی سکول میں پڑھانا چاہتے ہیں۔

پڑھنا نہ بھولیں:ہاتھوں میں جھاڑو،کاندھوں پر بستے،بچے سندھ حکومت کیخلاف سڑکوں پر آگئے
 
دوسری جانب ایجوکیشن اتھارٹی کا کہنا ہے کہ انہیں حکومت کی طرف سے آرڈرز ہیں اس لیے ہم پانچویں جماعت سے اوپر لڑکوں اور لڑکیوں کو الگ الگ سکول میں شفٹ کررہے ہیں۔
 

شازیہ بشیر

   Shazia Bashir   Edito