ملائیشیا میں قید پاکستانیوں کی حکومت سے دہائی

ملائیشیا میں قید پاکستانیوں کی حکومت سے دہائی


کوالالمپور(24نیوز)ملائیشیا کی جیلوں میں ڈیڑھ سو پاکستانی سزائیں پوری ہونے کے باوجود قید ہیں ۔ سزائیں کاٹ لی ہیں، حکومت عید سے پہلے وطن واپسی یقینی بنائے،قیدیوں کی دہائی۔ پاکستانی سفارت خانے نے قیدیوں کی رہائی اور وطن واپسی ممکن بنانے کے لِئے وزارت خارجہ کو خط لکھ دیا۔

ملائشیاء کی مختلف جیلوں میں قید 150 قیدی ایسے ہیں جو اپنی سزائیں مکمل کر چکے ہیں۔ لیکن چونکہ ملائیشیا قوانین کے مطابق ان کو تب تک آزاد نہیں کیا جا سکتا جب تک ان کے پاس پاکستان جانے کے لِے ہوائی ٹکٹ نہ ہو۔

قیدیوں کی اس حالت زار کو دیکھتے ہوِے بیورو چیف 24 نیوز واصف ملک، پی ٹی آئی کے راہنما عمران خان اور سماجی راہنما سید عباس شیرازی نےذاتی طور پر کوششیں کرتے ہوِے پاکستانی۔سفارت خانے کو ان کی حالت زار کا بتایا۔ جس کے بعد کمیونٹی اینڈ ویلفئیر اتاشی ڈاکٹر التمش جنجوعہ نے جیل میں ان پاکستانیوں سے ملاقاتیں کیں۔

 پاکستانی سفارت خانے کے ترجمان کے مطابق حکومت پاکستان کو اس حوالے سے خصوصی فلائیٹ کے لئے لکھ دیا گیا یے۔ تاکہ ان قیدیوں کو رہا کروا کر پاکستان واپس بھیجا جا سکے۔ لیکن تاحال حکومت نے اس پر کوئی ایکشن نہیں لیا۔ بظاہر یوں لگتا ہے کہ حکومت کے پاس اپنے اوورسیز پاکستانیوں کے لئے وقت بالکل نہیں ہے۔ اور یہ قیدی یہ عید بھی شائد ملائشیاء کی جیلوں میں ہی گزاریں گے-

اظہر تھراج

Senior Content Writer