بھارت دشمن کی جائیداد کا ضرورت مند بن گیا

بھارت دشمن کی جائیداد کا ضرورت مند بن گیا


دہلی(24نیوز) بھارتی حکومت نےتقسیم کےوقت پاکستان جانےوالےافرادکےضبط شدہ اثاثےہڑپ کرنےکافیصلہ کرلیا۔تقسیم ہند پرہجرت کرکے پاکستان چلے جانے والے افرادکےاثاثے کروڑوں ڈالر مالیت کےہیں۔

مودی سرکارمالی ضروریات پوری کرنےکےلیےدشمن کی جائیدادکی محتاج بن گئی۔ بھارتی حکومت نےہجرت کرنےوالوں کےاثاثےہڑپ کرنےکافیصلہ کرلیا۔ بھارت نےبرصغیرکی تقسیم پرہجرت کرنےوالے افرادکےاثاثےضبط کررکھےتھے۔ ترک بھارت کرنےوالوں کےکروڑوں ڈالرمالیت کےاثاثےکھاکربھارتی حکومت اپنی ضرورتیں پوری کرےگی۔

چین اور پاکستان چلے جانے والے افراد کی ملکیت رہنے والے ان اثاثوں کی مالیت کم از کم 55 ارب پاکستانی روپوں سے زائد ہے جنہیں بھارت میں دشمن کی جائیداد کا نام دیا گیا۔ بھارتی حکومت کو مارچ 2019 تک ریاستی اثاثوں کو فروخت کر کے تقریباً 24 کھرب روپے سے زائد رقم اکٹھی کرنی ہے جوکہ مشکل نظرآرہاہے۔ اسی لیےمودی حکومت نےان اثاثوں کوہڑپ کرنےکافیصلہ کرلیاجن پروہ گزشتہ71سالوں سےقابض ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق دشمن کے اثاثوں کی تعداد 16 ہزار ہےاور تقریباً تمام ہی اثاثے مسلمان خاندانوں کے ہیں جن کی مالیت کئی کروڑڈالرہے۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔