سابق وزیر اعظم نواز شریف کی حالت تشویشناک،ای سی ایل سے نام نہ نکالا جاسکا

سابق وزیر اعظم نواز شریف کی حالت تشویشناک،ای سی ایل سے نام نہ نکالا جاسکا


لاہور(زاہد چودھری)سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف   کی صحت بدستور خراب،پلیٹ لیٹس مزید گر گئے، لندن روانگی کی ٹکٹ کنفرم لیکن نام ای سی ایل سےنہ نکالا جاسکا۔

سابق وزیر اعظم نواز شریف کی حالت بدستور خراب ہے،پلیٹ لیٹس 16 ہزار تک پہنچ چکے ہیں،رپورٹس لندن روانہ کردئیے گئے لیکن نیب روانگی میں رکاوٹ بن گیا، نیب نے وزارت داخلہ سےنوازشریف کی واپسی کی گارنٹی مانگ لی۔میڈیکل بورڈ نے نیب کو جواب دیا ہے کہ جنیٹک ٹیسٹ کی سہولت پاکستان میں میسر نہیں۔

  نیب وزرت داخلہ کو اپنے خط میں کہا ہے کہ نوازشریف اعلاج کیلئے بیرون ملک جاسکتےہیں مگر ان کی وطن واپسی کی گرنٹی ضروری ہے، نواز شریف کی تازہ میڈیکل رپورٹ فراہم کی جائے، رپورٹ کو مدنظر رکھتے ہوئے حتمی فیصلہ کیا جائے گا۔ ای سی ایل میں نام بندستور رہنے کی وجہ سے نوازشریف کی بیرون ملک روانگی تعطل کا شکار ہے۔

ڈاکٹرز کے مطابق میاں نوازشریف کی جان کو خطرہ ہے،ان  کاعلاج پاکستان میں ممکن نہیں،فوری بیرون ملک لےجاناچاہیے،طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ نوازشریف کو بیرون ملک لیجانے کیلئے ائیر ایمبولینس کااستعمال کیاجائے،دوران فضائی سفر ائیر پریشر سے نوازشریف کی طبیعت بگڑ سکتی ہے، میڈیکل کور سمیت ہنگامی انتظامات ہونا ضروری ہیں،عام پرواز سے سفر نوازشریف کی صحت کیلئے رسک ہوگا،شریف فیملی نے آئندہ 24 گھنٹوں میں نوازشریف کو لیجانے کے انتظامات کرلئے ہیں۔

ذرائع کے مطابق ٹکٹ کی تفصیلات کے مطابق نوازشریف پیر کی صبح 9 بجکر 5 منٹ پر براستہ قطر دوحا اور لندن روانہ ہوں گے، نوازشریف قطر ایئرویئر کی پرواز کیوآر 629 سے لندن کے لیے روانہ ہوں گے۔ شہباز شریف اور ڈاکٹر عدنان بھی نواز شریف کے ساتھ ہوں گے۔ اس ضمن میں ذرائع سے حاصل ہونے والی ٹکٹ پر نوازشریف کی واپس پاکستان کے لیے سفر کی تاریخ 27 نومبر درج ہے۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer