سابق سینیٹر فیصل رضا عابد ی سپریم کورٹ کے باہر سے گرفتار


اسلام آباد( 24نیوز )سابق رہنما پیپلز پارٹی فیصل رضا عابدی کوسپریم کورٹ کے باہر سے گرفتار کرلیا گیا ہے۔

سپریم کورٹ میں جسٹس عظمت سعید کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے فیصل رضا عابدی کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت کی جس سلسلے میں پیپلزپارٹی کے سابق رہنما عدالت میں پیش ہوئے اور استدعا کی کہ ان کے وکیل عمرے پر گئے ہیں لہٰذا ان کی واپسی یا دوسرا وکیل کرنے تک کیس ملتوی کیا جائے۔

عدالت نے فیصل رضا عابدی کی استدعا منظور کرتے ہوئے سماعت 30 اکتوبر تک ملتوی کردی اور اٹارنی جنرل کو نوٹس جاری کردیا۔

دوسری جانب فیصل رضا عابدی جب سپریم کورٹ میں پیشی کے بعد باہر آئے تو واپس جاتے ہوئے شاہراہ دستورپر اسلام آباد پولیس نے انہیں گرفتار کرلیا، فیصل رضا عابدی کے خلاف تھانہ سیکریٹریٹ میں ایک اور مقدمہ گزشتہ رات درج کیاگیا جس کے مدعی اے ایس آئی شوکت عباسی ہیں۔پولیس ذرائع کے مطابق فیصل رضا عابدی کے خلاف مقدمے میں شہرت کو نقصان پہچانے، ڈی فیم کرنے کی دفعات لگائی گئی ہیں اور انہیں گزشتہ رات درج کیے گئے اسی مقدمے میں گرفتار کیا گیا ہے۔

پولیس کے مطابق فیصل رضا عابدی کے خلاف تھانہ سیکریٹریٹ میں ترجمان سپریم کورٹ کی مدعیت میں بھی مقدمہ درج ہے۔