الیکشن کمیشن کا پاکستان بھر میں سرکاری بھرتیوں پر پابندی کا اعلان


اسلام آباد (24نیوز) الیکشن کمیشن آف پاکستان نے تمام وفاقی، صوبائی اور مقامی حکومتی اداروں میں بھرتیوں پرپابندی عائد کر دی۔ یکم اپریل کے بعد منظور ہونے والی ترقیاتی سکیموں پرعمل درآمد روکنے کا بھی حکم دے دیا۔

24نیوز کے مطابق الیکشن کمیشن نے یکم اپریل سے وفاقی، صوبائی اور مقامی حکومتی اداروں میں بھرتیوں پر پابندی عائد کر دی۔ الیکشن کمیشن نے ترقیاتی منصوبوں پر عملدرآمد بھی روک دیا۔ ترقیاتی سکیموں کے فنڈز کسی دوسری مد میں منتقل بھی نہیں کیے جا سکیں گے۔

یہ بھی پڑھئے: ’’نواز شریف کو بند گلی نہیں، اڈیالہ جیل کی طرف دھکیل رہے ہیں‘‘ 

یکم اپریل کے بعد سے منظور کردہ ترقیاتی منصوبوں پر بھی کام نہیں ہو سکے گا۔ یکم اپریل کے بعد گیس پائپ لائنز کی تنصیب نہیں ہو سکے گی۔ سڑکوں کی کارپٹنگ اور واٹر سپلائی سکیموں پر عمل درآمد بھی روک دیا گیا۔

الیکشن کمیشن کی جانب سے پابندیوں کے اعلان کے بعد یہ امر واضح کر دیا گیا ہے کہ فیڈرل پبلک سروس کمیشن اور صوبائی پبلک سروس کمیشن کے تحت بھرتیوں پر پابندی نہیں ہو گی۔

پڑھنا نہ بھولئے: اڈیالہ جیل کی صفائیاں، ان کو کیسے معلوم کوئی آرہا ہے، نواز شریف 

دوسری طرف الیکشن کمیشن کی درخواست پر تمام ہائیکورٹس نے ڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفیسرز (ڈی آر اوز) اور ریٹرننگ آفیسرز (آر اوز) کے لیے جوڈیشل افسران کی فہرستیں مہیا کر دیں۔