مستونگ دھماکہ کاماسٹر مائنڈ کون تھا؟ پتہ چل گیا

10:11 AM, 11 Aug, 2018

وقار نیازی

کوئٹہ(24نیوز) مستونگ خوددھماکے میں گرفتارحملہ آور کے باپ اور بھائی سے تفتیش میں اہم انکشافات سامنے آگئے. خودکش حملے کاماسٹر مائنڈ داودمحسود کراچی پولیس میں دس سال نوکری کرتارہا اور برطرف ہونے کے بعد افغانستان میں ٹی ٹی پی میں شامل ہوا.

مستونگ خود کش حملے میں گرفتار باپ بیٹے نے دوران تفتیش اہم راز اگل دئیے .مستونگ خودکش دھماکے کا ماسٹر مائنڈ کراچی پولیس کا سابق اہلکار نکلا. ماسٹر مائنڈ داؤد مسعود پولیس میں سال 2004 میں بھرتی ہوااور سال 2013 میں کی سیکیورٹی زون ٹو سے نوکری سے برخاست ہوا.سی ٹی ڈی حکام کے مطابق دہشتگرد داؤد مسعودافغانستان سے نیٹ ورک چلا رہا ہے.

یہ بھی پڑھیں: مستونگ دھماکہ میں سراج رئیسانی کی تدفین آج ہوگی، ہر آنکھ اشکبار 
داؤد مسعود سندھ اور بلوچستان میں داعش کو منظم کرنے کی کوشش کررہاتھا۔سی ٹی ڈی کے ہاتھوں گرفتار مستونگ خودکش بمبارکاباپ نوازاور بھائی حق نواز افغانستان میں داؤد مسعود کے پاس فرار ہورہےتھے۔جبکہ گرفتار دہشتگردوں کے اہلخانہ بھی افغانستان میں ماسٹرمائنڈ داؤد مسعود کے زیر کفالت ہیں،گرفتارملزمان سے مزید تحقیقات جاری ہیں۔

مزیدخبریں